18

جماعت اسلامی 4 جولائی کو سود اور مہنگائی کیخلاف یوم احتجاج منائے گی،راو محمد ظفر

ملتان،امیر جماعتِ اسلامی جنوبی پنجاب رائو محمد ظفر نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے افغانستان کے حوالے سے امریکہ کو اڈے نہ دینے، خواتین کے باحیا لباس اور اسلاموفوبیا پر اچھی اور جرات مندانہ بات کی جس کا ہم نے خیرمقدم کیا،مگر حکومت نے گھریلو تشدد کے نام پر مسلم لیگ ن پیپلزپارٹی کے ساتھ ملکر منظور کرواکر اصلیت ظاہر کردی،پی ٹی آئی مسلم لیگ ن پیپلزپارٹی اسلام دشمنی مخرب کی تانعداری میں ایک ہیں،عمران خان واقعی مخلص ہیں تو ہمت کریں، آگے بڑھیں اور قرآن و سنت کی روشنی میں آئینِ پاکستان کے مکمل نفاذ سے ریاستِ مدینہ کا نظام نافذ کردیں،ورنہ دین کے متوالے اسی کسی سازش کو کامیاب نہیں ہونے دیںگے،ملک و ملـت کو بحرانوں سے نکالنے کا واحد علاج اسلام کی حکمرانی ہے،انہوں نے کہا کہ غربت، مہنگائی، بے روزگاری، ریاستی اداروں کی لاقانونیت قومی روگ بن گیا ہے،بجلی کی بدترین لوڈ شیڈنگ، مہنگی بجلی، تیل اور گیس عوام پر مسلط ہے اور اب حکومتی بدانتظامی، ناقص منصوبہ بندی کی وجہ سے ملک گیس کے بڑے بحران سے دوچار ہوگیا ہے،حکومتی نااہلی اور بدانتظامی قومی وحدت و یکجہتی کے لیے خطرناک شکل اختیار کرگئی ہے،4 جولائی اتوار کو امیرجماعت اسلامی پاکستان سنیٹر سراج الحق کی اپیل پر سود مہنگائی بےروزگار ی کے خلاف یوم احتجاج منایا جاہے گا،ان خیالات کا اظہار صوبائی ضلعی زمہ داران کے ہمراہ زیر تعمیر اسلامک سنٹر کے دورے کے موقع پر گفتگو کرتے ہوپے کیا،انہوں نےکہا کہ اسلامک۔سنٹر جنوبی پنجاب میں اسلامی انقلاب کا ذریعہ بنے گا،
راو محمد ظفر نے کہا کہ بجٹ عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کا کھیل ہے،بجٹ منظوری کا انتظار تھا آئی ایم ایف مذاکرات بحال ہونگے،عوام مہنگائی، گرانی اور بے روزگاری کے سونامی کا شکار ہونگی،انہوں نے کہا ہے کہ تمام بحرانوں اور مشکالات کا واحد حل سُودی نظام کا خاتمہ، قرضوں سے نجات اور خودانحصاری کی بنیاد پر اسلام کا معاشی نظام ہی ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں