19

اسلام آباد سینٹورس مال میں چوتھے سالانہ دو روزہ مینگو فیسٹیول کا افتتاح


اسلام آباد سینٹورس مال میں چوتھے سالانہ دو روزہ مینگو فیسٹیول کا افتتاح کردیا گیا،مینگو فیسٹیول کا انعقاد سینٹورس مال اورایم این ایس زرعی یونیورسٹی ملتان کے مشترکہ تعاون سے کیا گیا،مینگو فیسٹیول کا افتتاح وزیر زراعت پنجاب سید حسین جہانیاں گردیزی،ایڈوائزر فار کامرس اینڈ انویسٹمنٹ عبدالرزاق داؤد، سینٹورس مال اسلام آباد، سردار یاسر الیاس خان اورایم این ایس زرعی یونیورسٹی،ملتان کے وائس چانسلر پروفیسرڈاکٹر آصف علی (تمغہ امتیاز)نے کیا۔آم کی نمائش کے انعقاد میں چیئر مین بورڈ آف انوسٹمنٹ اینڈ ٹریڈسردار تنویر الیاس اور وائس چانسلر زرعی جامعہ ملتان پروفیسر ڈاکٹر آصف علی نے کلیدی کردار ادا کیا۔مینگو فیسٹیول میں 160سے زائد اقسام نمائش میں رکھی گئی،مینگو فیسٹول کے اسلام آباد میں انعقاد کا مقصد وزیراعظم پاکستان کے ویژن کے مطابق زراعت سے منسلک کاروبار چاہے وہ مقامی طور پر ہو یا برآمدات کی ترقی کے متعلق ہوا،سینٹو رس مال اسلام آباد مینگو فیسٹیول کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر زراعت پنجاب سید حسین جہانیاں گردیزی نے کہا کہ گزشتہ سالوں میں اسلام آباد سینٹورس مال میں مینگو فیسٹیول کے انعقادسے مینگو گرورز اور ایکسپورٹرز کو بہت فائدہ حاصل ہوا ہے، انہوں نے کہا کہ مینگو فیسٹیول کے ذریعے ہر چھوٹے اور بڑے آم کے کاشتکاروں کو آم کے معیار اور اس کی مارکیٹنگ کرنے کا علم حاصل ہوا ہے،انہوں نے کہا کہ ہمیں بہت خوشی ہے کہ ہمارے خطے کاآم جو کہ علم نہ ہونے کی وجہ سے کبھی اپنے گاؤں تک محدود تھا وہ آج سینٹورس مال اور دیگر ممالک میں ایکسپورٹ کیا جا رہا ہے،انہوں نے مزید کہاکہ آم کی برآمدات کو کم عرصہ میں دگنا کرنے کیلئے کوششیں جاری رکھیں گے تا کہ نہ صرف پاکستان کی معیشت ترقی کریگی بلکہ زراعت کا شعبہ پاکستان میں اپنی کلیدی حیثیت رکھنے کی وجہ سے بہتر انداز سے ترقی کرے گا،سینٹو رس مال اسلام آباد مینگو فیسٹیول کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ایڈوائزر فار کامرس اینڈ انویسٹمنٹ عبدالرزاق داؤد نے کہا کہ مینگو فیسٹیول میں آم کی اقسام اور ان کا معیار دیکھ کر بہت خوشی ہوئی ہے،انہوں نے کہا کہ میری دلی خواہش ہے کہ پاکستان سے دنیا بھر میں اتنا آم بھیجا جائے کہ ریکاڈ قائم ہو،انہوں نے کہا کہ کچھ عرصہ پہلے آم کو وہ اہمیت حاصل نہ تھی جو کہ جنوبی پنجاب کی زرعی یونیورسٹی، ملتان نے مینگو فیسٹیول کروا کر اس کی اہمیت کو اجاگر کیا اور ایک بڑی مارکیٹ میں لا کھڑا کیا،مینگو فیسٹیول کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سردار یاسر الیاس خان نے کہا کہ مینگو فیسٹیول کے لگا تار سالانہ کامیاب انعقاد سے پاکستانی آم کی ایکسپورٹ میں اضافہ ہو رہا ہے،انہوں نے کہا کہ ہمارا آم بہترین ذائقے اور خوشبو کی وجہ سے نہ صرف پاکستان بلکہ بین الاقوامی منڈیوں خصوصاً مشرق وسطٰی، برطانیہ اور یورپ میں بھی مقبو ل ہے،مینگو فیسٹیول کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وائس چانسلر جامعہ پروفیسر ڈاکٹر آصف علی نے کہا کہ پاکستان میں اس وقت آم کی مختلف اقسام کاشت کی جارہی ہیں،جن میں دسہری، سندھڑی، انو ررٹول، چونسہ،ثمر بہشت، چونسا، سفید چونسا، عظیم چونسا، کالا چونسا اور لنگڑا وغیرہ سر فہرست ہیں۔شوگر کے مرض میں مبتلا لوگوں کیلئے لو شوگر کونٹنٹ آم کی اقسام متعارف کروائی گئی ہیں جس میں کیٹ، کینٹ اورہیڈن اقسام شامل ہیں۔ ترشاوہ پھلوں کے بعد آم پیداواری لحاظ سے د وسرابڑا پھل ہے۔ جنوبی پنجاب کے تقر یباً ہر ضلع میں آم کی کاشت کی جاتی ہے۔ اس وقت پاکستانی آم بین الاقوامی منڈیوں میں جن داموں میں فروخت کیا جا رہا ہے وہ دیگر ممالک سے بہت کم ہے۔ہماری حکومت کی بھر پور کوشش ہے کہ آم کی ایکسپورٹ کیلئے کوالٹی کو مزید بہتر بنا کر اچھی قیمت حاصل کی جا سکے۔ انہوں نے کہاکہ زرعی جامعہ ملتان کی جانب سے آم کی ہائی ڈینسٹی پروڈیکشن کا آغاز کر دیا ہے جس کے تحت ایک ایکڑ میں 1300تک آم کے پودے لگائے جا سکتے ہیں اور اس حوالے سے زرعی یونیورسٹی ملتان میں آم کا ماڈل فارم لگا دیا گیا ہے۔وائس چانسلر زرعی جامعہ نے کہاکہ لکڑی کی پیٹی کو استعمال کرنے سے 20فیصد آم ضائع ہو جاتے تھے۔لکڑی کی پیٹی کے استعمال کو ختم کرنے اور گتے کے باکس کو استعمال میں لانے کیلئے زرعی یونیورسٹی ملتان نے مینگو گرورز کو ٹریننگ دینے کیلئے منتخب کیا ہے،جن کی کپیسٹی بلڈنگ کی جائے گی اور لکڑی کی پیٹی کے استعمال اور اس سے ہونے والے نقصانات کے بارے میں بتایا جائے گا۔اس حوالے سے زرعی یونیورسٹی ملتان میں یونی فریش مینگوز کے نام سے اپنی گتے کی پیکنگ کا برانڈ متعارف کروا دیا ہے۔ انہوں نے چیئر مین سینٹورس مال اور چیئر مین پنجاب انویسٹمنٹ بورڈ اینڈ ٹریڈ سردار تنویر الیاس کو مبارک باد دی۔ انہوں نے چیئر مین سینٹورس مال اور چیئر مین پنجاب انویسٹمنٹ بورڈ اینڈ ٹریڈ سردار تنویر الیاس کو مبارک باد دی۔انہوں نے مزید بتا یا کہ امسال زرعی یونیورسٹی ملتان کے سنٹر برائے مستحکم ترقی کے تحت آم کی پیداوار اور برآمداد کو درپیش چیلنجز سے نمنٹنے کیلئے 5سے زیادہ آن لائن سیمینار منعقد کئے اور تجاویز مرتب کیں۔سینٹو رس مال اسلام آباد میں منعقدہ 2 روزہ مینگو فیسٹیول میں آموں کی مختلف اقسام کے متعدد اسٹال لگائے گئے جس میں اسلام آباد او رراولپنڈی کے شہریوں نے بھر پور شرکت کی۔ مینگو فیسٹیول میں کے ایف کے ایگری فارمز میاں چنوں، اوبی ریو ٹریڈرز منڈی بہاؤ الدین، لطٖفا آباد مینگو فارمزاینڈ مینگو گرورز اینڈ ایکسپورٹرز ملتان، اصغر مینگو آرچرڈ فیصل آباد،امداد شاہ مینگو فارمز ملتان، بخاری مینگو فارمز اینڈ ایکسپورٹرز ملتان، حسین مینگو فارمز گرورز اور ایکسپورٹرز کوٹ ادو اور میاں فارمز چار سدہ کے پی کے سمیت 13 ممالک کے سُفراء اور اُن کے نمائندوں جن میں جرمنی، سعودی عریبیہ، نیپال، ایران۔ بیلجئیم، افغانستان، آذر بائجان اور دیگر فارمرز،ایکسپوٹرزاور سردار یاسر چئیرمین چیمبر آف کامرس اسلام آباد نے شرکت کی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں