15

ایم ڈی اے میں سب سے اہم ٹارگٹ ریونیو بڑھانا،نئے پراجیکٹ شروع کررہے ہیں،ڈی جی قیصر سلیم

ملتان(سٹاف رپورٹر)ڈائریکٹر جنرل ایم ڈی اے قیصر سلیم نے کہا ہے کہ ایم ڈی اے میں سب سے اہم ٹارگٹ ریونیو بڑھانا اور اس سلسلے میں نئے پراجیکٹ شروع کرنا ہے،ہم گھریلو اور کمرشل نقشہ جات پاس کرانے کا پراسس آسان اور قلیل مدتی کر دیا ہے،خالی پلاٹ پر گھریلو نقشہ چوبیس گھنٹوں میں پاس ہوگا،انہوں نے مزید کہا کہ ایم ڈی اے پر شہریوں کا اعتماد بحال کرنے کے لئے انقلابی اقدامات کر رہے ہیں،ڈائریکٹر جنرل ایم ڈی اے نے میڈیا کے ساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ محکمہ کا ریونیو بڑھانے کے لئے تمام وسائل استعمال کر رہے ہیں،اس لئے تمام بڑے ڈویلپرز کو ون ونڈو پراسس کے ذریعے بر وقت سہولیات میسر کرنے کے لئے اقدامات کئے جا رہے ہیں،ون ونڈو کے ذریعے ان لوگوں کو لوپ میں لے آئیں گے،ون ونڈو آپریشن کے لئے جدید تقاضوں کے مطابق کسٹمر کئیر سنٹر بنا رہے ہیں،تمام تر پراسس وقت مقررہ پر ہوگا،ٹرانسفر کے لئے اوپن میرٹ پالیسی اپنائی جا رہی ہے،انہوں نے کہا کہ ایم ڈی اے میں آئی ٹی سسٹم لانچ کیا جا رہا ہے،ایم ڈی اے میں ایچ آر کا مسئلہ حل کر رہے ہیں،تمام ڈائریکٹوریٹ کے آرگینوگرام نئے بنائے جا رہے ہیں اور ایچ آر کمیٹی تشکیل دے دی ہے،نئی پوسٹوں پر پبلک سروس کمیشن کے ذریعے بھرتی کرنے کے لئے آئندہ گورننگ باڈی کے اجلاس میں ایجنڈا پیش کیا جائے گا،جس کی حتمی منظوری گورنمنٹ سے لی جائے گی،ڈائریکٹر جنرل نے کہا ہے کہ شہر میں بے ہنگم کمرشل تعمیرات کے خلاف کارروائی کرنے کے لئے سروے کیا جا رہا ہے جو بہت جلد مکمل ہو جائے گا،اس سروے کو تھرڈ پارٹی انسپکشن کروائیں گی،تمام عمارتوں کی جی بی میپنگ کرائیں گے جس کے بعد ان کے خلاف کارروائی شروع کردی جائے گی،انہوں نے کہا کہ زیادہ سے زیادہ بر وقت سہولیات کی فراہمی کے لئے ای خدمت سنٹر پر عملہ تعینات کیا جا رہا ہے تاکہ لیگل پراسس کو کم سے کم وقت میں مکمل کیا جائے۔ ڈائریکٹر جنرل ایم ڈی اے نے کہا کہ وقت کے تقاضوں کے مطابق ایم ڈی اے میں نئے ڈائیریکٹوریٹ قائم کر رہے ہیں،تمام لیگل کیسز کا ڈیٹا تیار کیا جا رہا ہے آئندہ کسی بھی لیگل ایڈوائزر کے کنٹریکٹ میں توسیع اسکی کارکردگی سے مشروط کر دی گئی ہے،انہوں نے کہا کہ محکمہ کو اپنے پاؤں پر کھڑا کرنے کے لئے بہتر سے بہتر طریقے اپنائے جا رہے ہیں،شہریوں کو ایم ڈی اے میں سہولیات ملنے پر خود بخود عوام کا اعتماد بحال ہو جائے گا،شہریوں کا اعتماد بحال ہونے پر محکمہ میں تیزی آنا شروع ہو جائے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں