9

بچے کسی بھی قوم کا مستقبل ہوتے ہیں،پارلیمانی سیکرٹری ندیم قریشی

ملتان(سٹاف رپورٹر)صوبائی پارلیمانی سیکرٹری اطلاعات و ثقافت پنجاب محمد ندیم قریشی نے کہا ہے کہ بچے کسی بھی قوم کا مستقبل ہوتے ہیں ان کی اچھی اور بہتر تعلیم و تربیت ہم سب کا اولین فریضہ ہے،کیونکہ کل انہی بچوں نے ملک کی باگ ڈور سنبھالنا ہے ان سے بہتر کل کی امید انہیں بہترین آج دے کر ہی کی جاسکتی ہے،ہمارے بچے ہوشیار اور باصلاحیت ہیں جو دنیا میں کسی بھی ملک کے بچوں سے کم نہیں ہیں،ان خیالات کا اظہار انہوں نے بحیثیت مہمانِ خصوصی یونیورسل چلڈرن ڈے کے موقع پر ینگ پاکستانیز آرگنائزیشن اور پنجاب اوورسیز پاکستانیز کمیشن ڈسٹرکٹ ملتان کے زیراہتمام گورنمنٹ پائلٹ سیکنڈری سکول ملتان میں منعقدہ چلڈرن ایجوکیشن رائٹس کانفرنس 2021 کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کیا،کانفرنس کی صدارت پرنسپل گورنمنٹ پائلٹ سیکنڈری سکول حاجی ملک جہانگیر احمد انصاری نے کی،جبکہ مہمانان خصوصی میں چئیرمین پنجاب اوورسیز پاکستانیز کمیشن ملتان مخدوم شعیب اکمل قریشی ہاشمی،ڈسٹرکٹ آفیسر گورنمنٹ سپیشل ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ ملتان میاں محمد ماجد، سماجی رہنما رشید عباس خان، پروفیسر محمود ڈوگر اور صدر ینگ پاکستانیز آرگنائزیشن نعیم اقبال نعیم شامل تھے،اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے محمد ندیم قریشی نے کہا کہ کورونا وبا نے پوری دنیا کو ہر لحاظ سے نقصان پہنچایا،پاکستان کو بھی معاشی، معاشرتی مسائل کے ساتھ ساتھ تعلیمی اعتبار سے بھی بے پناہ نقصان پہنچا ہے،ایم پی اے ندیم قریشی نے مزید کہا کہ تعلیمی اداروں میں قرآن پاک کی ناظرہ تعلیم اور یکساں نصاب تعلیم اس حکومت کے وہ کارنامے ہیں جن کو تاریخ میں سنہری حروف میں لکھا جائے گا،دنیا کی سب سے بڑی ترجیح علم کا حصول ہے اور یہی ترجیح ہمارے بچوں کی ہونی چاہئے،کوئی بھی قوم اس وقت تک ترقی یافتہ قوم نہیں بن سکتی جب تک وہ اپنی نسل نو کو اعلٰی تعلیم سے آراستہ نہیں کرتے بچوں کو بڑوں کا احترام کرنا چاہئے اور دل لگا کر تعلیم حاصل کرنی چاہئے،تقریب سےخطاب کرتے ہوئے مخدوم شعیب اکمل ہاشمی اور میاں محمد ماجد کہا کہ 20 نومبر پاکستان سمیت دنیا بھر میں بچوں کے عالمی دن کے طور پر منایا جاتا ہے،جس کا مقصد لوگوں میں بچوں کے حقوق تحفظ کے حوالے سے شعور اجاگر کرنا ہے ہمارے بچے ہمارا مستقبل ہیں،حاجی جہانگیر احمد انصاری اور نعیم اقبال نعیم نے چلڈرن ایجوکیشن رائٹس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کورونا وبا کے باعث ہمارے تعلیمی نظام کو ناقابل تلافی نقصان پہنچا ہے،ہمیں اس نقصان کا ازالہ کرنا ہے اور اس کا بہترین طریقہ یہ ہے کہ اب طلباء و طالبات اپنی تعلم پر فوکس کریں اور خوب محنت و لگن سے اچھا رزلٹ دیں،اس موقع پر تقریب سے رشید عباس خان، پروفیسر محمود حسین ڈوگر، محمد عقیل شریف، مرزا علی رضا، وسیم عباس، حافظ محمد انس، محمد ارسل خان، محمد مہدی، معظم علی قریشی اور محمد رضا طاہر نے بھی خطاب کیا تھے،چلڈرن ایجوکیشن رائٹس کانفرنس کے آخر میں مہمانان خصوصی اور بچوں کتب کے تحائف اور اسناد تقسیم کی گئیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں