3

بڑی مچھلیوں سے رقم وصولی،کٹہرے میں لانے کیلئے پرعزم ہیں،چیئرمین نیب

اسلام آباد(بیورو رپورٹ) قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس (ر) جاوید اقبال کی زیر صدارت نیب ہیڈ کوارٹرز میں نیب راولپنڈی کی کارکردگی کا جائزہ لینے کے لئے ایک اعلی سطح اجلاس ہوا،چیئرمین نیب حسین اصغر، پراسیکیوٹر جنرل سید اصغر حیدر، ڈی جی آپریشنز ظاہر شاہ، اور ڈی جی نیب راولپنڈی عرفان نعیم منگی کے علاوہ نیب کے دیگر سینئر افسر اجلاس میں موجود تھے،ڈائریکٹر جنرل نیب عرفان نعیم منگی نے بتایا کہ چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کی قیادت میں نیب راولپنڈی نے11اکتوبر2017سے اب تک موصول ہونے والی 24ہزار87میں سے 23ہزار 1سو 69شکایات نمٹا دیں جبہ 1167شکایات پر اقدامات جاری ہیں۔ نیب راولپنڈی نے 45کرپشن کیسز میں 71ملزمان سے 26.438بلین جبکہ 50کرپشن کیسز کے50ملزمان سے 286.243بلین روپے بلا واسطہ اور بالواسطہ طور پر وصول کئے،جسٹس (ر) جاوید اقبال نے ڈی جی نیب راولپنڈی عرفان نعیم منگی کی نگرانی میں نیب راولپنڈی کی عمدہ کارکردگی کو سراہا اور امید ظاہر کی کہ نیب راولپنڈی آئندہ بھی قانون کے مطابق اسی ذمہ داری اور لگن کے ساتھ اپنی ذمہ داریاں نبھاتا رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ نیب بڑی مچھلیوں سے لوٹی ہوئی رقم کی وصولی اور انہیں قانون کے مطابق انصاف کے کٹہرے میں لانے کے لئے میگا کرپشن کیسز کے منطقی انجام تک پہنچانے کیلئے پرعزم ہے،نیب ایک انسان دوست تنظیم ہے جو قانون کے مطابق ہر شخص کی عزت نفس کو یقینی بنانے پر یقین رکھتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں