9

بھارت افغانستان میں سپائیلرکا کردارادا کررہا ہے،وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی

ملتان(سٹاف رپورٹر)وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ بھارت افغانستان میں سپائیلرکا کردارادا کررہا ہے،بھارت کا منفی رویہ خطے کے استحکام کیلئے مناسب نہیں، بھارت اپنے علاقائی مفادات کیلئے خطے کا امن خراب نہ کرے، بھارت امن کے عالمی ایجنڈے کی راہ میں رکاوٹ ہے، پاکستان ایف اے ٹی ایف کے حوالے سے 27میں سے 26 نکات پرعمل کرچکاہے،اس حوالے سے دنیا پاکستان کے کردار کی تائید کررہی ہے لیکن بھارت رخنہ ڈال رہاہے،انہوں نے کہاکہ بھارتی وزیر خارجہ جے شنکر اعتراف کرچکے ہیں کہ ہم نے پاکستان کو فیٹف کی گرے لسٹ میں رکھوانے کی کوشش کی۔لیکن بھارت کو عالمی سطح پرمسلسل ناکامی کاسامنا ہے۔بھارت ریاستی دہشت گردی میں ملوث ہے ۔مقبوضہ کشمیر میں آج بھی پابندیاں زوروں پر ہیں ۔ بھارت مقبوضہ جموں وکشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں میں ملوث ہے، عالمی برادری کو اس کا نوٹس لینا چاہیے۔ان خیالات کااظہار انہوں نے نماز عید الاضحی کے بعد دربار حضرت بہاءالدین زکریا ؒ کے احاطے میںمیڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا،وفاقی پارلیمانی سیکرٹری خزانہ مخدومزادہ زین حسین قریشی بھی اس موقع پر موجود تھے۔انہوں نے کہا کہ افغان سفیر کی بیٹی کے ساتھ پیش آئے واقعے کے قریب پہنچ چکے ہیں۔ افغان سفیر کی بیٹی کے مبینہ اغوا کی مکمل تحقیقات کی جارہی ہیں۔ہم چاہتے ہیں دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائے ،ہمارے اداروں نے اس واقع کی فوٹیج حاصل کی ہے اور 250سے زیادہ لوگوں سے پوچھ گچھ کی ‘اس تحقیقات کو منطقی انجام تک پہنچانے کے لیے افغان سفیر اوران کی بیٹی کاتعاون درکارہے۔افغان حکومت سے درخواست کی ہے کہ افغان سفیر کی بیٹی کے فون ڈیٹا تک رسائی دی جائے،اور ہم نے افغان حکومت سے گزارش کی ہے کہ افغانستان سفیر واپس بلانے کے فیصلے پر نظر ثانی کرے۔ اس وقت افغانستان نازک صورتحال سے گزر رہا ہے ایسے میں افغان سفیر کی واپسی مناسب نہیں۔انہوں نے کہا اس حوالے سے جو بھی نتائج آئیں گے افغان حکومت سے شیئر کریں گے۔انہوں نے کہاسی پیک کے خلاف افواہیں پاکستان کے دشمن پھیلا رہے ہیں، یہ وہ قوتیں ہیں جو پاکستان میں غیر ملکی سرمایہ کاری کو متاثر کرنا چاہتی ہیں۔ یہ وہ قوتیں ہیں جو پاک چین تعلقات کو خراب کرنا چاہتی ہیں۔ ہم داسو واقعہ کی طے تک پہنچ چکے ہیں،یہ افسوس ناک واقعہ ہے۔میں اور چینی سفیر سی ایم ایچ راولپنڈی گئے جہاں ہم نے داسو واقعہ کے متاثرین کی عیادت کی وہ حکومت پاکستان کی جانب سے علاج و معالجہ کی سہولیات کے حوالے سے مطمئین ہیں۔ میں کل چین کے دورہ پر روانہ ہو رہا ہوں جہاں پر چینی حکومت سے پاک افغان تعلقات ،سی پیک اور دیگر اہم معاملات پر بات چیت کرونگا۔ انہوں نے کہا پاک چین دوستی لا زوال ہے اور ہم عزم کا عہد کرتے ہیں پاک چین تعلقات کو خراب کرنے والی قوتیں ناکام ہونگی اور پاک چین ملکر ان کے عزائم کو خاک میں ملائیں گے۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا افغان مسئلے پر زلمے خلیل زاد کو صدر جو بائیڈن نے ذمہ داری سونپی ہے۔انہو ں نے کہاکہ تاشقند میں ناموافق حالات کے باوجود وزیراعظم عمران خان نے افغان صدر اشرف غنی سے ملاقات کی۔ہم نے انہیں بتایا افغانستان میں امن کے حوالے سے ہم تمام سٹیک ہولڈرز سے بات چیت کررہے ہیںاور ہماری خواہش ہے افغانستان میں پائیدار امن کے قیام کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان کے مسئلے پر مذاکرات کے سلسلہ میں نشست صدر اشرف غنی کی مصروفیات کے باعث ملتوی کی گئی۔آزاد کشمیر الیکشن سے متعلق گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ نے کہا کہ اپوزیشن کے تحفظات کا اظہار سمجھ سے بالا ترہے،اور ان تحفظات میں وزن نہیں ہے۔ آزاد کشمیر کی انتظامیہ مسلم لیگ ن کے وزیراعظم کو جوابدہ ہے ، آزاد کشمیر میں ن لیگ حکومت کے سیٹ اپ میں ہی انتخابات ہو رہے ہیں، دھاندلی کے خدشات کا اظہار مسلم لیگ ن کا آزاد کشمیر حکومت پر عدم اعتماد ہے۔سعودی عرب کی جانب سے قیدیوں کی رہائی کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا پاکستانی قیدیوں کی رہائی پر سعودی حکومت کے شکر گزار ہیں۔افواہ تھی کہ پاک سعودی تعلقات خراب ہوئے جبکہ ایسا نہیں۔بھارت کی جانب سے فون ٹیپ کرنے کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں انہو ںنے کہاہمیں بتایا گیا کہ اسرائیلی نیٹ ورک دہشت گردی کو کنٹرول کرنے کے لئے استعمال کیا جانا تھا جو نہیں ہوا بلکہ بھارت نے فون ٹیپ کرنے کے لئے اسرائیلی سافٹ ویئر استعمال کیا، جو افسوسناک بات ہے۔ دنیا کے دیگر ممالک کے ساتھ بھارتی اپوزیشن کو بھی اس سے نشانہ بنایا گیا۔انہوں نے کہا میں اس عید پر پوری قوم کو عید کی مبارکباد پیش کرتا ہوں۔یہ دوسری عید ہے جو ہم غیر معمولی حالات میں منا رہے ہیں۔ دوسرا سال ہے کورونا کے باعث حج کی سعادت حاصل نہیں ہو پارہی۔اس سال بھی 60ہزا ر کے قریب افراد نے حج کی سعادت حاصل کی۔ آج کے دن دعا کریں اللہ تعالیٰ اس وبا ءکا خاتمہ کرے اور ہر مسلمان کو حج کی سعادت نصیب ہو۔قبل ازیں وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے اپنے صاحبزادے مخدومزادہ زین حسین قریشی اور خاندان کے دیگر افراد کے ہمراہ نماز عید الاضحی ادا کی ۔ نماز کے اختتام پر انہو ںنے ملکی ترقی اور سا لمیت کیلئے خصوصی دعا کروائی ، بعد ازاں انہوں نے حضرت بہاءالدین زکریا ؒ کے مزار پر حاضری دی اوردربار کے احاطے میں واقع اپنے خاندان کے بزرگوں کی قبروں پر حاضری دی اور ان کی مغفرت کیلئے فاتحہ خوانی کی.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں