18

بھٹہ مزدوروں کو سوشل سیکیورٹی کارڈ جاری کرنے کیلئے عملی اقدامات کا آغاز

ملتان،پرائیویٹ اداروں میں کام کرنیوالے کارکنوں اور بھٹہ مزدوروں کو سوشل سیکیورٹی کارڈ جاری کرنے کے لئے عملی اقدامات کا آغاز کر دیا گیا،28جون سے بھٹہ مزدوروں کو سوشل سیکیورٹی کارڈ جاری کرنے کے لئے رجسٹریشن کا سلسلہ شروع کیا جائے گا،کارکنوں کی رجسٹریشن میں تعاون نہ کرنیوالوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی،ان خیالات کا اظہار اے ڈی سی جی قمرالزمان قیصرانی نے ڈسٹرکٹ ویجیلنس کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا،اے ڈی سی جی نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھٹہ مزدوروں کو بنیادی حقوق دینے کے لئے انہیں سوشل سیکیورٹی کارڈ کا اجراء ضروری ہے،اے ڈی سی جی قمر الزمان قیصرانی نے کہا کہ سوشل سیکیورٹی کارڈ کے اجراء سے انہیں پنشن،علاج معالجہ اور مالی امداد کا حق مل جائے گا،اولڈ ایج بینیفٹ انسٹی ٹیوشن اور محکمہ لیبر کے افسران سوموار سے مزدوروں کی رجسٹریشن کے لئے بھٹوں کا دورہ کریں گے،بھٹہ مزدوروں کو سوشل سیکیورٹی کارڈ کے اجراء میں مزید تاخیر برداشت نہیں کی جائے،کمرشل اداروں کے کارکنوں کی رجسٹریشن کے لئے انکی انسپکشن کی جائے،اے ڈی سی نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کارکنوں اور مزدوروں کی رجسٹریشن میں تعاون نہ کرنیوالے اداروں کے مالکان کو کارروائی کا سامنا کرنا پڑے گا، قانون میں جبری مشقت کی کوئی گنجائش نہیں ہے،چائلڈ لیبر میں ملوث افراد کے خلاف درج مقدمات کے چالان عدالت کو بھجوائے جائیں،اجلاس میں محکمہ لیبر،سوشل ویلفئیر،پولیس،ای او بی آئی اور بھٹہ خشت یونین کے عہدیداران بِھی شریک ہوئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں