5

تیزاب گردی کا شکار،حوا کی بیٹی نشتر ہسپتال میں دم توڑ گئی

خانیوال(نمائندہ پی این این اردو)حصول انصاف کی منتظر تیزاب گردی کا شکار ہونے والی حوا کی بیٹی ایک ماہ بعد نشتر ہسپتال میں دم توڑ گئی،مرنے سے پہلے مرحومہ نے خانیوال پولیس کی تفتیش پر عدم اعتماد کا اظہار کیا تھا،تفصیل کے مطابق ایک ماہ قبل نواحی علاقہ میں چچا زاد سجاد نے زمین کے تنازع پر یاسمین پر تیزاب پھینک دیا تھا جس سے اس کا چہرہ اور جسم بری طرح جل گیا تھا،تھانہ صدر خانیوال نے مقدمہ درج کر کے تفتیش شروع کر دی تھی،مگر نشتر ہسپتال میں ایک ماہ سے زیرعلاج ہونے والے یاسمین نے خانیوال پولیس کی تفتیش پر عدم اعتماد کا اظہار کیا تھا جس پر تفتیش تبدیل کرکے وہاڑی منتقل کر دی گئی تھی وہاڑی ایس ڈی پی او مظہر حیات اس واقعہ کی انکوائری کر رہے تھے۔ یاسمین ایک ماہ تک موت وحیات کی کشمکش میں رہی اسے انصاف نہ مل سکامگر وہ خالق حقیقی سے جا ملی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں