13

جاوید اقبال کی اینٹی کرپشن سٹرٹیجی مؤثر ترین حکمت عملی تسلیم کی گئی،نیب

اسلام آباد،معاشرے اور ملک کو بدعنوانی سے پاک کرنے کیلئے قومی احتساب بیورو کا قیام عمل میں لایا گیا،قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس ر جاوید اقبال نے اپنا منصب سنبھالنے کے بعد نیشنل اینٹی کرپشن سٹریٹجی بنائی جس کو بدعنوانی کے خلاف موئثر ترین حکمت عملی کے طور پر تسلیم کیا گیا ہے۔ ترجمان نیب کے مطابق چئیرمین نیب نے ادارے میں بہت سی نئی اصلاحات متعارف کروائیں جس کو عملی جامہ پہنانے کیلئے قومی احتساب بیورو کے چئیرمین نے بدعنوانی کے خاتمہ کو اپنی اولین ترجیح قرار دیتے ہوئے بدعنوانی کے خاتمہ کیلئے نہ صرف زیرو ٹالرینس کی پالیسی اپنائی بلکہ کسی بھی دبائو کو خاطر میںنہ لاتے ہوئے میرٹ، شواہد اور قانون کے مطابق بدعنوان عناصر سے اکتوبر 2017 سے ابتک تقریبا بالواسطہ اور بلا واسطہ مجموعی طور پر تقریبا533 ارب روپے بدعنوان عناصر سے برآمد کرکے قومی خزانے میں جمع کروائے۔ جسٹس جاوید اقبال اس بات پر پختہ یقین رکھتے ہیںکہ ادارے افراد سے بنتے ہیں اگر افراد محنت، ایمانداری اور لگن کے ساتھ قانوں کے مطابق اپنے فرائض سرانجام دیتے ہیں تو نہ صرف ان اداروں کی عزت اور ساکھ میں اضافہ ہوتا ہے وہاں معاشرے کے تمام طبقوں کے افراد اس ادارے پر اعتماد کا اظہار کرنے کے علاوہ ادارے سے منسلک افراد افسران اہلکاروں کو عزت و احترام کی نظر سے دیکھتے ہیں۔ قومی احتساب بیورو کے چیئرمین نیب کے افسروں کا تعلق کسی سیاسی پارٹی سے نہیں وہ ریاست کے ملازم ہیں اور بلاتفریق قانون کے مطابق اپنا کام کررہے ہیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں