10

جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے قیام سے عوام کی محرومیوں اور پسماندگی کا خاتمہ ہوگا،ندیم قریشی

ملتان(سٹاف رپورٹر)صوبائی پارلیمانی سیکرٹری برائے اطلاعات و ثقافت پنجاب محمد ندیم قریشی نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی کی حکومت نے وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی قیادت میں جنوبی پنجاب کے عوام سے کئے گئے وعدے کی پاسداری کرتے ہوئے جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کو مکمل طور پر بااختیار اور خود مختار بنا کر جنوبی پنجاب کے عوام کا دیرینہ مطالبہ پورا کر دیا ہے،جس سے اس خطے کے لوگوں کی محرومیوں اور پسماندگی کا خاتمہ ہوگا،انہوں نے کہا کہ بزدار حکومت کے اس تاریخ ساز فیصلے سے ایڈیشنل چیف سیکرٹری سمیت 17 محکموں کے سیکرٹریز مکمل طور پر با اختیار بنا دئیے گئے ہیں جس سے تین ڈویژنز کے 11 اضلاع میں 17 سرکاری محکموں کے ہزاروں ملازمین کے تقرر، تبادلے اور مقامی لوگوں کے مسائل یہیں پر حل ہوں گے اور ملازمین اور عوام الناس کو اپنے ضروری سرکاری امور کے سلسلے میں لاہور کے سفر سے نجات مل جائے گی،انہوں نے مزید کہا کہ پنجاب کی تاریخ میں پہلی دفعہ ساوتھ پنجاب کیلئے الگ اے ڈی پی بک کا اجراءکیا جا رہا ہے اور جنوبی پنجاب کے لئے 33 فیصد بجٹ مختص کیا گیا ہے،اس تاریخی اقدام سے جنوبی پنجاب میں ترقی اور خوشحالی کا نیا دور شروع ہوگا اور جنوبی پنجاب کی محرومیاں دور ہوں گی اور یہاں کے عوام کے مسائل ان کی دہلیز پر حل ہوں گے،انہوں نے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے جنوبی پنجاب کے عوام سے کئے وعدہ کی پاسداری کرتے ہوئے عملی قدم اٹھایا ہے اور جنوبی پنجاب کے ایڈیشنل چیف سیکرٹری اور سیکرٹریز کو انتظامی طور پر مکمل بااختیار کر دیا گیا،جنوبی پنجاب کے سیکرٹریز کو ترقیوں، تبادلوں اور بھرتیوں کے وہ تمام اختیارات مل گئے،جو پنجاب کے سیکرٹریز کو حاصل ہیں،صوبائی پارلیمانی سیکرٹری ندیم قریشی نے کہا کہ پنجاب کی تاریخ میں پہلی دفعہ ساوتھ پنجاب کیلئے الگ اے ڈی پی بک کا اجراءکیا گیا ہے اور جنوبی پنجاب کے لئے 33 فیصد بجٹ مختص کیا گیا ہے جو کہ 190 ارب روپے بنتا ہے،انہوں نے کہا کہ جنوبی پنجاب کے بجٹ کی رنگ فینسنگ کر دی گئی ہے اور اب اس بجٹ کو کسی اور مقصد کے لئے استعمال نہیں کیا جا سکتا جبکہ ماضی میں زیادہ بجٹ بتا کر جنوبی پنجاب پر کم خرچ کیاجاتا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں