16

حکمران صوبہ بنانے کیلئے تیار نہیں،صوبے کیلئے سڑکوں پر آنا ہوگا،رانا فراز نون

ملتان(سٹاف رپورٹر)حکمران صوبہ بنانے کیلئے تیار نہیں ،صوبے کیلئے سڑکوں پر آنا ہوگا، سرائیکی صوبہ ہمارا آئینی حق ہے،ان خیالات کا اظہار چیئرمین سرائیکستان ڈیموکریٹک پارٹی رانا محمد فراز نون نے اپنے ایک بیان میں کیا، انہوں نے کہا کہ گزشتہ دور حکومت میں آئین ساز ادارے سینیٹ سے سرائیکی صوبے کا بل دوتہائی اکثریت کے ساتھ پاس ہوا ہے اور سرائیکی صوبے کا آئینی تحفظ بھی حاصل ہوچکا ہے ،حکمران بلاتاخیر صوبے کا قیام عمل میں لائیں ورنہ وسیب کے لوگ سڑکوں پر آئیں گے اور نتائج کی ذمہ داری حکمرانوں پر عائد ہوگی،انہوں نے کہا کہ موجودہ دور حکومت میں سرائیکی وسیب کا سب سے زیادہ نقصان ہوا ،جنوبی پنجاب سول سیکرٹریٹ کے نام پر سرائیکی وسیب کا جغرافیہ قتل ہورہا ہے اور وسیب کی شناخت کو مسخ کیا جارہا ہے ،ہم وسیب کی مکمل حدود اور شناخت پر مشتمل صوبے کے علاوہ کوئی آپشن قبول نہیں کریں گے اور ٹانک و ڈی آئی خان صوبے کا لازمی جز ہے۔ رانا محمد فراز نون نے کہا کہ حکومت وسیب کے لوگوں کے ساتھ مذاق بند کرے اور اُن کو حقوق دے۔ وسیب کے لوگ خیرات نہیں اپنا حق مانگتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تین سال گزر گئے حکومت نے صوبے کیلئے ایک قدم بھی نہیں اٹھایا۔ حکومت کی نیت ٹھیک نہیں ہے،صوبے کے قیام کیلئے سڑکوں پر آئیں گے اور اُس وقت تک خاموش نہیں رہیں گے جب تک سرائیکی صوبہ نہیں بنے گا،رانا محمد فراز نون نے کہا کہ امن و امان کی صورتحال ابتر ہو چکی ہے،وزیر اعلیٰ کی موجودگی میں صوبائی وزیر کے بھائی کا قتل اور سابق ایم این اے جمشید دستی کے بھائی کا قتل امن و امان بدتر صورتحال کی واضح مثالیں ہیں،انہوں نے کہا کہ ہم لواحقین سے تعزیت کرتے ہوئے مطالبہ کرتے ہیں کہ قاتلوں کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں