19

حکومت نے 3 سال میں 463 ارب سے زائد کی اراضی واگزار کرائی،بابر حیات تارڑ کا اجلاس سے خطاب

ملتان(سٹاف رپورٹر)سینئر رکن بورڈ آف ریونیو پنجاب بابر حیات تارڑ نے کہا ہے کہ حکومت پنجاب نے 3 سال میں 463 ارب سے زائد کی اراضی واگزار کرائی،جبکہ عرصہ دراز سے زیرالتواءاربوں کی ٹیکس ریکوری بھی کی گئی ہے،انہوں نے کہا کہ پراپرٹی ریکارڈ میں شہریوں کے شناختی کارڈ کے اندراج سے ٹیکس نیٹ بڑھایا جارہا ہے تاکہ ریونیو بہتر کیا جاسکے،ان خیالات کا اظہار انہوں نے ملتان آمد پر کمشنر آفس میں اعلیٰ سطح کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا،اجلاس میں کمشنر ارشاد احمد نے سرکاری واجبات اور ٹیکس ریکوری پر تفصیلی بریفننگ دی،اس موقع پر ڈپٹی کمشنر عامر کریم خان سمیت تینوں اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز بھی اجلاس میں موجود تھے،سینئر رکن بورڈ آف ریونیو پنجاب بابر حیات تارڑ نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسٹامپ فروشی میں شفافیت لانے کیلئے پنجاب بھر میں سمارٹ کارڈ کوڈ سسٹم متعارف کرارہے ہیں جس کا پائلٹ پراجیکٹ جلد ضلع لیول پر شروع کیا جائے گا،انہوں نے کہا کہ دیہی مرکز مال صحیح معنوں میں عوام کو ریلیف فراہم کررہا ہے،خواتین کیلئے الگ دیہی مرکز مال بنانے کا منصوبہ بھی شروع کیا جارہاہے،بابر حیات تارڑ کا کہنا تھا کہ تحصیلداروں سمیت ریونیو عملے کے ترقی کیسز کو تیزی سے نمٹایا جارہا ہے،پہلی مرتبہ اس دور حکومت میں ریونیو افسران کو تیزی سے ترقیاں دی گئی ہیں،تاکہ انکا مورال بلند کیا جاسکے۔انہوں نے بتایا کہ نئے بھرتی پٹواریوں کی تربیت کا سلسلہ ملتان سے شروع کیا جائے گا،تاکہ انکو کارآمد بنایا جاسکے،اجلاس میں سینئر رکن بورڈ آف ریونیو نے حکم دیا کہ سرکاری نادہندگان کے گھروں پر نوٹس اور اشتہارات شائع کئے جائیں اور ریکوری بہتر کی جائے،پنجاب کے کلچر کو دستاویزی شکل میں ڈھالنے کیلئے صوبے کے تمام شہروں کا ضلعی گزٹ تیار کرایا جارہاہے جسے آن لائن بھی اپ لوڈ کیا جائے گا،اس موقع پر کمشنر ارشاد احمد نے بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ ڈویژن کے تمام دیہی مرکز مال مکمل فعال ہیں جبکہ خدمت ریونیو کچہریوں سے عوام کو واضح ریلیف فراہم کیا جارہا ہے،ڈاکٹر ارشاد احمد نے کہا کہ ڈپٹی کمشنرز کو سرکاری ٹیکسز کی فوری ریکوری کا ٹاسک دیا ہے تاکہ ملتان ڈویژن کی ریکنگ بہتر کی جاسکے۔ڈپٹی کمشنر عامر کریم خاں نے بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ ریونیو کیسز کو میرٹ پر نمٹاکر ڈیش بورڈ پر اپ لوڈ کیا جارہا ہے ریکوری بہتر کرنے کیلئے سرکاری اراضیوں اور کمرشل تنصیبات سے ریونیو جنریشن کا نظام وضح کررہے ہیں جس کے بہتر نتائج برآمد ہونگے،ڈپٹی کمشنر کا کہنا تھا کہ دیہی مرکز مال پر کسان کارڈ کی فراہمی کیلئے بھی اقدامات کئے جارہے ہیں۔ضلعی انتظامیہ زرعی و ریونیو ٹیکسز کے اہداف حاصل کرنے کیلئے زیرو ٹالرنس پالیسی پر عمل پیرا ہے،بعد ازاں ڈپٹی کمشنرز وہاڑی،خانیوال اور لودھراں نے بھی بریفنگ دی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں