16

خانیوال،مال گودام نشئیوں کی آماجگاہ، پولیس نمبر پلیٹ والی موٹرسائیکل پر منشیات کی سپلائی

خانیوال(نمائندہ پی این این اردو)تھانہ کہنہ کے علاقہ میں غلہ منڈی کے شمال جانب مال گودام میں نشئیوں کی ٹولیوں کی ٹولیاں نظر آتی ہے مگر انتہائی افسوس ناک بات یہ کہ ان نشہ کرنے والوں کو پولیس نمبر پلیٹ والی موٹر سائیکل پرایک نوجوان روزانہ کی بنیاد پر منشیات سپلائی کرنے کے لئے آتا ہے،اعجاز نامی یہ نوجوان اس موٹر سائیکل پر مبینہ طور پر نشہ آور انجکشن اور دیگر منشیات لے کر آتا ہے اور وہاں پر پہلے سے انتظار میں موجودنشہ کرنے والوں کو نشہ فروخت کرکے چلا جاتا ہے،اعجاز نامی نوجوان نہ صرف خود نشہ کرتا ہے بلکہ بڑی مقدار میں اس جگہ پر نشہ بھی سپلائی کرتا ہے،نشہ کرنے والے تمام دن پولیس نمبر پلیٹ والی موٹر سائیکل کا انتظار کرتے ہیں بازاروں میں بھیک مانگ کر اور چوری کی وارداتیں کرکے یہ نشئی اپنانشہ پورا کرتے ہیں،ایڈز اور دیگر خطرناک بیماریوں میں مبتلا یہ نشئی اس سوسائٹی کی بے حسی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ڈسٹرکٹ ہسپتال میں نشئیوں کی بحالی کیلئے کوئی بھی وارڈ مختص نہیں اور نہ ہی ان کی بحالی کے لیے کوئی انتظامات کیے گئے ہیں۔پولیس نمبر پلیٹ والی موٹر سائیکل پر سوار اعجاز نامی نوجوان سے جب نوائے وقت نے پوچھا کہ وہ کہاں سے آیا ہے اور کس کے کہنے پر یہ سپلائی دیتا ہے اور موقع پر نوجوان کی تصویر بنانا چاہیں تو وہ موقع سے فرار ہوگیا۔یاد رہے کے مال گودام میں بہت سارے نشہ کرنے والے افراد میں ایسے نوجوان طالب علم ہیں جو مختلف تعلیمی اداروں میں پڑھتے ہیں مگر شام ڈھلتے ہی اس مال گودام میں جمع ہو جاتے ہیں اور نشہ کرتے ہیں جس سے ان کا مستقبل تاریک ہو رہا ہے۔ضرورت اس امر کی ہے کہ اس علاقے میں منشیات کی سپلائی کی چین کو فوری طور پر ختم کیا جائے اور پولیس نمبر پلیٹ والی موٹرسائیکل پر سپلائی کے لئے آنے والے نوجوان کی گرفتاری ہر حال میں یقینی بنائی جائے تاکہ یہاں ایسا کام ختم ہو سکے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں