12

دو دن لاک ڈائون ناانصافی،چھوٹے تاجروں کو قربانی کا بکرا بنانے کے تجربات بند کئے جائیں،قومی تاجر اتحاد کے صدر سلطان محمود و دیگر

ملتان(سٹاف رپورٹر)قومی تاجر اتحاد کے صدر سلطان محمود ملک، جنرل سیکرٹری جنوبی پنجاب ملک اکرم سگو، ضلعی صدر ملتا ن ملک مقبول کھوکھر، سٹی صدر ملتان ملک اقبال جاوید، جنرل سیکرٹری سٹی شیخ محمدسلیم، ملک امجد سیال نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہفتہ میں دو دن کا لاک ڈاؤن سراسرظلم ہے،چھوٹے تاجروں کو قربانی کا بکرا بنا کر تجربات بند کئے جائیں،کیا کورونا رات 8 بجے کے بعد کاروباری حلقوں میں داخل ہو گا اور 5 دن کی چھٹی پر رہنے کے بعد ہفتہ اور اتوار کو ہی آئے گا؟ لگتا ہے حکومت غیر ملکی فنڈ لینے کے لئے اس قسم کے ڈھونگ رچا رہی ہے، اپنی ملک کی معیشت کو کمزور کر رہی ہے،قومی تاجر اتحاد کے صدر سلطان محمود ملک نے مزید کہا کہ حکومت بار بار کرونا کے تجربات کو ہم چھوٹے تاجروں پر نہ آزمائے، کیا سبزی منڈی، غلہ منڈی، کچہری، یوٹیلٹی سٹوروں پر لمبی لائن میں رش اور لمبی لمبی قطاروں میں عوام ویکسی نیشن لگانے کے لئے کھڑی ہے ایسے لگتا ہے ان کو کورونا سے بچنے کا حکومت نے خصوصی پاس جاری کیا ہے کہ کورونا وائرس کو خاص طور پران پر حملہ سے روکا گیا ہے،انہوں نے مزید کہا ہم چھوٹے تاجر پہلے ہی کاروباری طور پر بدحالی کا شکار ہیں پونے دو سال سے لاک ڈان کے عذاب کو بھگت رہے ہیں، ملازمین کی تنخواہ اور دیگر حکومتی ٹیکس ہم اپنی جمع پونچی سے ادا کر رہے، کافی چھوٹے تاجر اپنے کارو بار سے ہاتھ دھو بیٹھے، اب دوبارہ شاہی فرمان سے چھوٹا تاجر مفلس ہو جائے گا اور مجبور ہو کراپنا کاربار بند کر دئے گا جس سے بے روز گاری میں مزید اضافہ بڑھے گا، ہم مطالبہ کرتے ہیں رات آٹھ بجے دوکانیں بند کرنے اور ہفتہ میں دو دن کی چھٹی کا فیصلہ واپس لیا جائے ورنہ تاجر برادری سڑکوں پر احتجاج کرنے پر مجبور ہوگی ، عمران خان چھوٹے تاجروں کے مسائل کے حل کے لئے بڑے تاجروں کی طرح ہمارے مسائل بھی سنے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں