9

ریاست بہاولپور کے حکمرانوں کی نشانی،بہاولپور ہاوس ٹوٹ پھوٹ کا شکار

احمدپورشرقیہ(نمائندہ پی این این اردو)سابق ریاست بہاولپور کے حکمرانوں نے بہاولپور ہاوس لاہورمیں تعمیر کرایا اور یہ ایک عظیم الشان عمارت جو شکست و ریخت کا شکار ہے،1890ء میں اس عظیم الشان عمارت نواب صادق محمد خان چہارم (25 مارچ 1866ء تا 14 فروری 1899) نے بنوائی،بعد ازاں یہ رہائش گاہ نواب محمد بہاول خان پنجم (15 فروری 1899ء تا 15 فروری 1907) کے استعمال میں رہی،یاد رہے کہ انھوں نے بہاول وکٹوریہ ہسپتال بنوایا،یہ امر بھی قابل ذکر ہے نواب محمد بہاول خان پنجم کی تاجپوشی 12 نومبر 1903ء میں ہوئی جس میں اس وقت کے وائسرائے ہند “لارڈ کرزن ” (Lord Curzon) نے خود ڈراور آ کر اس تاجپوشی کی تقریبات میں شرکت کی۔ آج ڈراور بنگلہ پسماندگی کی ہولناک تصویر ہے۔بعدازاں نواب سر صادق محمد خان خامس عباسی ایچی سن کالج لاہور میں دوران تعلیم اس عظیم الشان عمارت میں قیام پذیر رہے۔اس عمارت میں چار بڑے ہال کمرے اور بیشمار ملحقہ کمرے ہیں۔ اس عمارت میں کشادہ ڈائیننگ روم اور کچن علیحدہ ہے۔ اس عظیم الشان عمارت کے ساتھ ملازمین کی رہائش گاہیں بھی ہیں جن کو اب “کنٹین” کے طور پر استعمال کیا گیا۔یہ عظیم الشان عمارت ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے،اگر یہ عمارت لندن میں ہوتی تو حکومت کے متعلقہ ادارے اور کونسل اس کی مناسب دیکھ بھال کرتی۔ لندن میں سیکڑوں سال پرانی کئی عمارتوں کے مالکان کو ان کی دیکھ بھال اور تزین و آرائش کے لیے حکومت بھاری فنڈ مہیا کرتی ہے تاکہ ان تاریخی اثاثوں کو محفوظ کیا جا سکے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں