16

سرکل انچارجز کرنٹ ریکوری کیساتھ بقایاجات کی وصولی کیلئے جنگی اقدامات کریں،ایم ڈی واسا ناصر اقبال

ملتان(سٹاف رپورٹر)منیجنگ ڈائریکٹر واسا ناصراقبال نے کہا ہے کہ واسا بنیادی سروسز فراہم کرنے والا انتہائی اہم ادارہ ہے،جو کہ صارفین کے عدم تعاون اور 2004 سے ٹیرف نہ بڑھنے کی وجہ سے ہمیشہ بحران کا شکار رہا اور اب ریکوری سٹاف کی عدم دلچسپی کے باعث گزشتہ دو ماہ سے ریکوری ٹارگٹ مکمل نہ ہونے کی وجہ سے مالی مشکلات میں مزید اضافہ ہوگیا ہے ،اگر شعبہ ریکوری نے فوری طور پر ان حالات کا مقابلہ نہ کیا اور ریکوری میں اضافے کیلئے تمام وسائل بروئے کار نہ لائے تو اگست کے مہینے کی تنخواہوں کی ادائیگی بھی مشکل ہو جائے گی انہوں نے رواں مہینے میں اب تک کی کارکردگی کا جائزہ لیتے ہوئے کم ریکوری کے حامل افسران کو حتمی وارننگ جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹارگٹ کے حصول اور بقایاجات کی وصولی کے لئے ٹھوس اقدامات کریں بصورت دیگر ریکوری اہداف حاصل نہ کرنے والے افسران و سٹاف کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے گا،ان خیالات کا اظہار انہوں نے ہیڈ آفس شمس آباد میں ریکوری سے متعلق اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا،اجلاس میں ڈائریکٹر ریکوری منصور احمد سمیت تمام سرکل انچارجز شریک تھے،ایم ڈی واسا نے اس دوران مزید کہا کہ بجلی واجبات کی مد میں کروڑوں روپے کے بقایاجات واجب الادا ہیں اور میپکو نے واسا تنصیبات کے کنکشن منقطع کرنے کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے،جبکہ تنخواہ ،پنشن اوربجلی کے ماہانہ بلوں ،ضروری اخراجات کا ماہانہ حجم 15کروڑ روپے سے تجاوز کر چکا ہے،سرکل انچارجز کرنٹ ریکوری کے ساتھ ساتھ بقایاجات کی وصولی کے لئے جنگی اقدامات کریں،اگست کے مہینے کی کلوز نگ پر تمام سرکل انچارج کی کارکردگی رپورٹ کا بھی جائزہ لیا جائے گا اور ناقص کارکردگی کے حامل سٹاف کے خلاف تادیبی کارروائی عمل میں لائی جائے گیراس دوران تمام سرکل انچارجز نے اپنے اپنے ریکوری اہداف کو ہر صورت حاصل کرنے کی یقین دہانی کروائی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں