19

سوشل میڈیا پر مذہبی منافرت پھیلانے والے عناصر کا سخت محاسبہ کیا جائے،راجہ بشارت،محرم کے جلوسوں کے راستے سے تجاوزات ہٹانے کی ہدایت

ملتان(سٹاف رپورٹر)وزیر قانون و کوآپریٹوز پنجاب راجہ بشارت نے کہا ہے کہ سوشل میڈیا پر مذہبی منافرت پھیلانے والے عناصر کا سخت محاسبہ کیا جائے اور ضلعی انتظامیہ اپنے علاقے کی امن کمیٹیوں، ایمرجنسی بورڈذ اور لائسنسداروں سے مسلسل رابطہ رکھے،وہ جمعہ کے روز یر سول سیکرٹریٹ میں کابینہ کمیٹی لاء اینڈ آرڈر کے اجلاس میں ویڈیو لنک کے ذریعے ملتان ڈویژن میں محرم الحرام کے حوالے سے کئے گئے حفاظتی انتظامات کا جائزہ لے رہے تھے،آئی جی پولیس پنجاب، ایڈیشنل چیف سیکریٹری داخلہ، ایڈیشنل آئی جی سی ٹی ڈی اور دیگر افسران نے بھی شرکت کی،جبکہ ایڈیشنل چیف سیکرٹری و ایڈیشنل آئی جی جنوبی پنجاب، متعلقہ کمشنرز، آرپی اوز، ڈی پی اوز،ڈپٹی کمشنرز، ڈویژنل و ضلعی امن کمیٹیوں کے ارکان و علما کرام نے ویڈیو لنک کے ذریعے شرکت کی،وزیر قانون نے تمام علماء کرام سے اپیل کی کہ وہ حسب روایت مذہبی ہم آہنگی اور بھائی چارے کی فضا قائم رکھیں اور کسی بھی قسم کی دہشت گردی کو ناکام بنانے کےلئے حکومت کا ساتھ دیں،انہوں نے مزید کہا کہ مذہبی اجتماعات ، مجالس اورجلوسوں کے اوقات، روٹس اوردیگر ایس او پیز پر عملدرآمد یقینی بنانے کیلئے مقامی اراکین قومی و صوبائی اسمبلی کے ساتھ اجلاس کر کے ان کی معاونت حاصل کی جائے،راجہ بشارت نے ہدایت کی کہ عزاداری جلوسوں کے راستوں سے تجاوزات محرم سے پہلے ہٹا دئیےجائیں اور کورونا کی چوتھی لہر کے پیش نظر حکومتی ہدایات پر سختی سے عمل کرایا جائے،صوبائی وزیر نے پولیس کو ہدایت کی کہ وہ کرایہ داری ایکٹ پر سختی سے عملدرآمد کرائے،قبل ازیں آئی جی پنجاب نے ایڈیشنل چیف سیکرٹری وایڈیشنل آئی جی جنوبی پنجاب کو ہدایت کی کہ وہ محرم کے دوران تمام اضلاع کی خود نگرانی کریں اورحکومتی ہدایات کی خلاف ورزی پر کسی سے کوئی نرمی نہ برتی جائے ۔ ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ نے کہا کہ تمام ڈپٹی کمشنرز اپنے علاقے میں موجود پرنٹنگ پریسوں کی سخت نگرانی کریں،نیز اپنے اپنے ضلع کی رپورٹ روزانہ صوبائی کنٹرول روم کو بھجوایا کریں گے،قبل ازیں بریفننگ میں بتایا گیا کہ ملتان ڈویژن میں محرم کے 910 جلوس اور 3 ہزار 182 مجالس منعقد ہوں گی جبکہ محرم سے پہلے ڈویژنل اور ضلعی کنٹرول روم کام شروع کردیں گے۔ بریفنگ میں مزید بتایا گیا کہ6 تا 10 محرم الحرام رینجرز اور آرمی کے نوجوان بھی ضلعی انتظامیہ کی معاونت کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں