18

سٹی ہسپتال انتظامیہ کی نااہلی،ڈاکٹر نے غلط علاج سے مریضہ کی جان لے لی

ملتان(سٹاف رپورٹر)شہر کے سب سے بڑے سٹی ہسپتال میں ڈاکٹر نے غلط علاج سے مریضہ کی جان لے لی،ڈیلیوری کیس کے لئے لائی گئی خاتون نے ٹرپ ٹرپ کر جان دے دی،خاتون کے شوہر شہباز کا کہنا ہے کہ میں اپنی بیوی کو چیک کرانے سٹی ہسپتال لایا تھا،میری بیوی کی ڈیلیوری کی تاریخ 11اگست دی گئی تھی،چیک اپ کے لئے لایا تو میری بیوی کو داخل کر دیا گیا،وقت سے پہلے مصنوعی درد کے انجیکشن اور ادویات لگائیں،انجیکشن لگتے ہی میری بیوی کی حالت بگڑ گئی ہاتھ مڑ گئے،آپریشن کیا تو بیٹے کی پیدائش ہوئی جسکی حالت بھی تشویشناک ہے،متاثرہ کا کہنا ہے کہ مجھے ڈر ہے یہ میرے بیٹے کے ساتھ بھی کچھ غلط علاج نہ کریں،ایم این اے ملک عامر ڈوگر نے مجھے انصاف کی یقین دہانی کروائی ہے،ملک عامر ڈوگر نے اس کیس کو ہیلتھ کئیر کمیشن بھجوانے کا کہا ہے،میری بیگم کا آپریشن ڈاکٹر صالحہ بتول نے کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں