20

شہباز شریف، حمزہ کیخلاف شوگرملز،منی لانڈرنگ الزام میں ایف آئی اے کوشواہد مل گئے

لاہور،ملک میں جاری کرپشن کے بڑے مقدمات پر ایف آئی اے نے انویسٹی گیشن کا دائرہ کار مزید وسیع کردیا ہے،جس کے بعد ایف آئی اے حکام میگا کرپشن کیسز پر کامیابی کے لئے پرامید ہو گئے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ایف آئی اے کو وفاق کی طرف سے ہدایات ہیں کہ کرپشن کیسز پر کسی کو رعایت نہ دی جائے،اس حوالے سے ایف آئی اے لاہور نے شوگر ملز سکینڈل میں پچیس ارب روپے کی منی لانڈرنگ کے الزام میں اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی شہباز شریف اور اپوزیشن لیڈر صوبائی اسمبلی پنجاب حمزہ شہباز کے خلاف تمام شواہد اکٹھے اور مکمل کر لئے ہیں،اور ایف آئی اے پر امید ہے کہ وہ 10 جولائی کو ان تمام شواہد کی بنیاد پر عدالت کو قائل کرکے ان کی ضمانت خارج کروا دے گی اور اس کے بعد شہباز شریف اور حمزہ شہباز کی گرفتاری عمل میں لائی جاسکتی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ شہباز شریف اور حمزہ شہباز کی ایف آئی اے لاہور پیشی کے وقت تحقیقاتی ٹیم کے سوالات کے جواب نہیں دے سکے تھے جس پر ایف آئی اے بالکل غیر مطمئن نظر آئی۔ ایف آئی اے نے سوالنامہ ان کے سامنے رکھا کہ اکاؤنٹس میں کروڑوں روپے کی منتقلی کیسے ہوئی۔ رمضان اور العزیزیہ شوگر ملز کے ملازمین کے اکاؤنٹس سے اربوں روپے شریف فیملی کے اکاؤنٹس میں منتقل کیسے ہوئے۔ مگر وہ تسلی بخش جوابات نہ دے سکے۔ تحقیقاتی ٹیم نے ایک گھنٹہ 5 منٹ تک ان سے سوالات کئے۔ ایف آئی اے لاہور نے ان کے جوابات کو عدالت پیش کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں