14

ضلعی انتظامیہ کا کورونا وبا کی آڑ میں چھوٹے تاجروں کی دکانیں سیل اور بے بنیاد مقدمات میں پھنسا کر لوٹ مار کا سلسلہ بند نہ ہوا تو مرکزی تنظیم تاجران سول نافرمانی کی تحریک چلانے پر مجبور ہوگی،خواجہ سلیمان صدیقی

ملتان(سٹاف رپورٹر)مرکزی تنظیم تاجران پاکستان کے مرکزی چیئرمین خواجہ سلیمان صدیقی، جنوبی پنجاب کے صدر شیخ جاوید اختر، ضلع ملتان کے صدر سید جعفر علی شاہ، صدر ملتان خالد محمود قریشی، صد رغلہ منڈی راجہ مدثر، جنرل سیکرٹری ملتان مرزا نعیم بیگ نے کہا ہے کہ ضلعی انتظامیہ نے کورونا وبا کی آڑ میں چھوٹے تاجروں کی دکانیں سیل کرکے اور بے بنیاد مقدمات میں پھنسا کر لوٹ مار کا سلسلہ بند نہ کیا تو مرکزی تنظیم تاجران سول نافرمانی کی تحریک چلانے پر مجبور ہوجائے گی،ملک بھر کی طرح ملتان کے ہزاروں چھوٹے تاجر حکومتی ہدایت کی روشنی میں ایس او پیز پر حقیقی معنوں میں عملدر آمد کرتے ہوئے اپنے کاروبار کو جاری رکھے ہوئے ہیں،لیکن نامساعد حالات کے باوجود معاشی بدحالی کا شکار چھوٹے تاجروں اور دکانداروں کو ضلعی انتظامیہ ملتان نہ صرف حراساں و پریشان اور دوکانوں کو سیل کر رہی ہے،بلکہ جھوٹے مقدمات میں پھنسا کرلوٹ مار کا سلسلہ بھی جاری ہے اور کئی جگہوں پر زبردستی دکانیں بھی بند کرائی جارہی ہیں جس کی جتنی مذمت کی جائے وہ کم ہے گذشتہ دوبرسوں کے دوران چھوٹے تاجروں کو کرونا وباء کے باعث جس طرح معاشی بدحالی کا سامنا کرنا پڑا وہ کسی سے پوشیدہ نہیں ہے لیکن اس کے باوجود لاکھوں چھوٹے تاجروں نے حکومت و انتظامیہ کے ساتھ تعاون کا سلسلہ جاری رکھا اور اسی تعاون کے سلسلہ کو آج بھی چھوٹے تاجر جاری رکھے ہوئے ہیں اور انتہائی معاشی بدحالی کے باوجود چھوٹے تاجر حکومت کو اربوں روپے کے ٹیکسز دے رہے ہیں لیکن اس کے باوجود مقامی پولیس کا چھوٹے تاجروں نے ناروا رویہ انتہائی افسوسناک ہے جس کی جتنی مذمت کی جائے وہ کم ہے خواجہ سلیمان صدیقی نے مزید کہا کہ اگر ضلعی انتظامیہ نے اپنا رویہ نہ بدلہ تو مرکزی تنظیم تاجران سول نافرمانی کی تحریک چلانے پر مجبور ہو جائے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں