26

غیر قانونی کمرشل عمارات کیخلاف کارروائیاں،قانونی تقاضوں پر پورا اترانے والی عمارات کو این او سی جاری کیا جائیگا،ڈپٹی کمشنر

ملتان(سٹاف رپورٹر)ڈپٹی کمشنر علی شہزاد نے بائی لاز کی خلاف ورزی اور بغیر نقشہ قائم غیر قانونی کمرشل عمارات کیخلاف سخت کارروائی کا حکم دیا ہے،انہوں نے ہدایت کی کہ بائی لاز کی خلاف ورزی کرکے انفراسٹرکچر تباہ کرنے والی عمارات کی انسپکشن کی جائے،انہوں نے واضح کیا کہ قانونی تقاضوں کے مطابق پورا اترنے والی عمارات کو ہی این او سی جاری کیا جائے گا،ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈسٹرکٹ پلاننگ اینڈ ڈیزائن کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا،اجلاس میں انڈسٹریل پارک سمیت مختلف کمرشل عمارات کی منظوری کے کیسز کا جائزہ لیا گیا،ڈپٹی کمشنر علی شہزاد نے اجلاسں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ زرعی و سکنی اراضی کو کمرشل کرنے کیلئے مکمل قانونی تقاضے پورے کئے جائیں اور ماسٹر پلان کے مطابق شہر کے انفراسٹرکچر میں بہتری لائی جائے،علی شہزاد کا کہنا تھا کہ کمرشل سرگرمیوں کے فروغ کیلئے ایم ڈی اے اور میونسپل کارپوریشن سمیت تمام ادارے مشترکہ لائحہ عمل طے کریں اور حدود کے حوالے سے متنازع روڈز و علاقہ جات کا فیصلہ کیا جائے،ڈپٹی کمشنر نے مزید کہا کہ شہری آبادی کے پھیلاو کو مدنظر رکھ کر کمرشل روڈز کا تعین کیا جائے گا اور کسی صورت بائی لاز کی خلاف ورزی برداشت نہیں کی جائے گی،قبل ازیں ضلعی ڈویلپمنٹ اینڈ پلاننگ کمیٹی نے مختلف منصوبوں کی منظوری بھی دی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں