5

فرد ملکیت میں ردو بدل کرکے صنعتکار سے فراڈ،اینٹی کرپشن عدالت نے پٹواری سمیت دو ملزمان کو 31 سال قید اور تین کروڑ 6 لاکھ جرمانے کی سزا سنا دی

ملتان(کامران سعید سے)سپیشل جج اینٹی کرپشن ملتان آصف مجید اعوان نے فرد ملکیت میں ردوبدل کرکے مدعی اور قومی خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچانے کے مقدمہ میں ملوث پٹواری اور اس کے ساتھی کو مجموعی طور پر 31 سال قید اور تین کروڑ 6 لاکھ روپے کا بھاری جرمانہ ادا کرنے کی سزا سنائی ہے،قبل ازیں فاضل عدالت میں پولیس تھانہ اینٹی کرپشن خانیوال کے مطابق ملزمان محمد شاہد یوسف اور ملک محمد نواز کے خلاف 8 جنوری 2019 کو فرد ملکیت میں ردوبدل کر کے فراڈ کرنے کا مقدمہ نمبر 2 درج کیا گیا تھا ملزم شاہد یوسف جو کہ پٹواری ہے اس نے اپنے دیگر ساتھیوں محمد نواز ،محمد عمران اور فریاد گجر جو کہ اشتہاری قرار دیے گئے تھے ان کے ساتھ مل کر محمد سلیم، یاسین اور ناہید اختر کو جعلی فروخت کنندہ ظاہر کرکے 720 کنال 17 مرلے زمین 6 کروڑ 90 لاکھ روپے کے عوض مدعی کو فروخت کردی اور ایک کروڑ روپے گورنمنٹ کی فیس کی مد میں حاصل کی گئی جس پر اینٹی کرپشن نے مقدمہ کا چالان عدالت کو بھجوایا تو ملزمان کو عدالت نے 8 ستمبر 2020 کو سمن جاری کرتے ہوئے طلب کیا ملزمان کے کے خلاف موجود گواہوں کی شہادتیں قلمبند کی گئی جس کی روشنی میں پراسیکیوشن نے اپنے لگائے گئے الزامات کو ثابت کیا اور اسی بنیاد پر ملزمان کو لمبی قید اور جرمانے کی سزا سنائی گئی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں