7

فوڈ اتھارٹی کی کارروائی،ایکسپائرڈ اسپغول،گٹکا اور غیرمعیاری آئل تلف


ملتان،مضر صحت خوراک تیار کرنے والے عناصر پنجاب فوڈ اتھارٹی کے حصار میں آگئے،ڈرنک کارنر، فیٹ رینڈرنگ اور پیکنگ یونٹس پر چھاپے مار کر بھاری جرمانے عائد کئے گئے،5 ہزار ساشے ایکسپائرڈ اسپغول، 900 ساشے گٹکا، 150کلو چائنا سالٹ اور 30کلو جانوروں کی چربی سے تیار ناقابل سراغ آئل تلف کردیا گیا،ڈی جی فوڈ اتھارٹی رفاقت علی نسوانہ نے کہا کہ جانوروں کی چربی سے تیار آئل کا ریکارڈ نہ ہونے پر 2 فیٹ رینڈرنگ یونٹس کی بہتری تک پروڈکشن بند کردی گئی ہے،آئل کی تیاری، خریدو فروخت کا ریکارڈ اور مصنوعات پر کوئی لیبلنگ واضح نہ کی گئی تھی،انہوں نے مزید کہا کہ بھاری مقدار میں ایکسپائرڈ اسپغول، ممنوع چائنا سالٹ کی موجودگی پر مصالحہ جات پیکنگ یونٹ کو 50 ہزار روپے جرمانہ عائد کیا ہے،زنگ آلود مشینری کا استعمال، زائد المعیاد اشیاء کی دوبارہ پیکنگ اور فوڈ گریڈ سرٹیفکیٹ نہ ہونے پر جرمانہ کیا گیا،ڈی جی فوڈ اتھارٹی رفاقت علی نسوانہ نے کہا کہ ممنوعہ گٹکا فروخت کرنے پر ڈرنک کارنر کو 15 ہزار روپے جرمانہ عائد کیا گیا ہے،کارروائی کے دوران 954 ساشے گٹکا موقع پر تلف کردیا گیا،مضر صحت خوراک تیار کرکے عوام کی صحت سے تماشہ لگانے والوں کیخلاف شکنجہ مزید سخت کیا جارہا ہے. ڈی جی فوڈ اتھارٹی رفاقت علی نسوانہ نے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاپ کے ویژن کے مطابق خوراک کے معیار کو بہتر بنانے کیلئے بدستور کارروائیاں عمل میں لائی جارہی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں