5

قبضہ گروپ کیخلاف قانونی راستہ اپنائیں گے،بادوزئی پٹھان فیملی

میلسی(نمائندہ پی این این اردو)میلسی کی معروف بادوزئی پٹھان فیملی کے رہنما سجاد حسین خان بادوزئی ان کے بھائیوں حسن محمود خان بادوزئی، محمد عثمان خان بادوزئی ، ولید خان بادوزئی نے معروف تاجر حاجی محمود الحسن کے ہمراہ پریس کانفرنس میں کہا ہے کہ نسیم اختر خان پٹھان ہمارا بہنوئی اور قریبی رشتہ دار ہے اور ہماری فیملی کی نواحی موضع میرانپور میں زرعی اراضی موجود ہے نسیم اختر خان کے بھتیجے فیصل جاوید خان نے اپنے والد کی وفات کے بعد وراثتی اراضی مختلف لوگوں سے ایڈوانس رقوم وصول کر کے ان کے حق میں بیانات دینا شروع کر دیئے جس پر پوری فیملی نے نسیم اختر خان کو سمجھایا کہ وہ لوگوں کی اصل رقوم واپس کر اکے یتیم بھتیجے کی اراضی واپس کرائے جس پر نسیم اختر خان نے ہمدردی کی آڑ میں بھتیجے کی 8کروڑ روپے مالیت کی 40ایکڑ اراضی 3کروڑ روپے میں خود اینٹھنے کیلئے برادری اور قریبی دوستوں سے رقم ادھار مانگنا شروع کر دی اس دوران سجاد حسین خان نے اپنی میلسی شہر میں واقع کوٹھی ایک کروڑ روپے میں فروخت کر کے اپنے کھاد کے کاروبار میں رقم لگالی لیکن نسیم اختر خان نے اپنے برادر نسبتی سجاد حسین، حسن محمود خان ، محمد عثمان اور قریبی رشتہ دار محمد ولید خان سے 4 ہزار بوری کھاد اور نقد رقوم حاصل کیں اور ہم نے بغیر کسی اضافی منافع کے اسے کھاد دے دی جس نے یہ رقم حاصل کرنے کیلئے خود کم نرخوں میں کھاد فروخت کی اور کیش حاصل کر کے بھتیجے کی مذکورہ اراضی واپس حاصل کی لیکن یتیم بھتیجے کو اسکا حق دینے کی بجائے بدنیت ہو گیا اور ساری زمین خود ہڑپ کر لی اسی طرح اپنی سگی بہن کی بھی نسیم اختر خان نے 10ایکڑ ارزرعی اراضی فرخت کر کے رقم ہمشیرہ کو دینے کی بجائے خود ہڑپ کر گیا اور اسکی سگی بہن کا خاندان آج کوڑی کوڑی کا محتاج بن چکا ہے لیکن یہ شخص اپنی ہمشیرہ کے کروڑوں روپے ڈکار گیا ہے انہوں نے کہا کہ دی گئی اصل رقم میں سے سجاد حسین خان نے 70لاکھ روپے حسن محمود خان نے 75لاکھ روپے ، محمد عثمان خان نے 14لاکھ روپے ، ولید خان نے 10لاکھ روپے نسیم اختر خان سے لینے ہیں جس کے وہ اپنے دستخط شدہ چیک ہمیں دے چکا ہے اسی طرح اس نے میلسی کے معروف تاجر اور کار شو روم کے مالک حاجی محمود الحسن سے بھی کاریں خریدیں اور بقیہ رقم حاصل کے کے اسے ساڑھے 4ایکڑ اراضی دی جس کے انتقال کے ہم خود گواہ ہیں اور اب اسے بھی بلیک میل کر رہا ہے مذکورہ اراضی پر بیرون علاقوں سے لائے گئے اشتہاریوں کے ذریعے دو مرتبہ قبضہ جمانے کی کوشش کر چکا ہے جس پر اس کیخلاف تھانہ میرانپور میں دو مقدمات درج ہیں لیکن اس کے باوجود یہ چند غنڈہ عناصر کے ہمراہ مل کر زمین پر قبضہ جمانے کے در پے ہے انہوں نے کہا کہ مذکورہ شخص ہمارے خلاف جھوٹا اور بے بنیاد پروپیگنڈا کر کے خوفزدہ کرنا چاہتا ہے اسی لئے ہمارے خلاف گھٹیا الزام تراشی کی جا رہی ہے ہمارے علاوہ بڑی تعداد میں دیگر لوگوں سے بھی رقوم بٹور کر انہیں چیک دے چکا ہے اور کاروائی سے بچنے کیلئے رقوم لینے والوں کو خوفزدہ کر رہا ہے ہم اپنا حق حاصل کرنے کیلئے قانون کا دروازہ کھٹکھٹائیں گے وزیر اعظم عمران خان ، وزیر اعلیٰ پنجاب اور چیف جسٹس ہمیں نسیم اختر خان پٹھان کے گروہ سے تحفظ دلائیں اور ہمارے لوٹی گئی زندگی بھر کی جمع پونجی واپس دلائی جائے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں