5

قلعہ کہنہ قاسم باغ کیساتھ 10 کنال اراضی میوزیم کیلئے مختص

ملتان،کمشنر جاوید اختر محمود نے

کردی ہے،ڈویژنل انتظامیہ کا شہر اولیاء کے زرخیز تہذیب و تمدن کو اجاگر کرنے کیلئے عملی قدم ہے،کمشنر جاوید اختر محمود نے قلعہ کہنہ قاسم باغ کیساتھ 10 کنال اراضی میوزیم کیلئے مختص کردی ہے،اس سلسلے میں سیکرٹری ٹورزم کو باقاعدہ مراسلہ بھی لکھ دیا گیا ہے،کمشنر جاوید اختر محمود نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سالانہ ترقیاتی پروگرام میں میوزیم کی 8 کروڑ کی سکیم منظور ہوئ ہے،انہوں نے کہا کہ ۔شہر اولیاء شاندار تاریخ وتہذیب کا وارث ہے،کمشنر نے مزید گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ملتان قدیم ترین شہر ہے، آج بھی اپنے پورے تقدس کے ساتھ زندہ ہے،میوزیم تاریخ،تہذیب و ثقافت کے عکاس ہوتے ہیں،کمشنر جاوید اختر محمود نے کہا کہ زندہ قومیں تاریخ و ثقافت کو محفوظ رکھتی ہیں،اہل ملتان اپنے بزرگوں کی تاریخی اور نادر اشیاء کو میوزیم میں رکھوا سکتے ہیں،اس موقع پر کمشنر کا کہنا تھا کہ نادر اشیاء شہری کی خاندانی تاریخ کیساتھ رکھی جائیں گی،انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم پاکستان کے ویژن کیمطابق سیاحت کے فروغ کیلئے اقدامات کئے جارہے ہیں اور ملتان کے ثقافتی ورثہ کو محفوظ بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے،انہوں نے مزید کہا کہ انسان کا اس کی تہذیب و تمدن سے رشتہ اتنا ہی پرانا ہے جتنا کہ خود انسانی تاریخ کا کسی بھی ملک کے عجائب گھر وہاں کی تاریخ،تہذیب و ثقافت کے عکاس ہوتے ہیں،۔کمشنر ملتان نے اپیل کی کہ اہل ملتان اپنے بزرگوں کی تاریخی اور نادر اشیاءکو میوزیم میں رکھوا سکتے ہیں۔ نادر اشیاءکے وارث شہریوں کی خاندانی تاریخ بھی لکھ جائیں گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں