16

محکمہ زراعت کے شعبہ اصلاح آبپاشی اور نیشنل بینک آف پاکستان کے مابین ایم او یو پر دستخط

ملتان(سٹاف رپورٹر)محکمہ زراعت پنجاب کے شعبہ اصلاح آبپاشی اور نیشنل بینک آف پاکستان کے مابین ایم او یو پر دستخط،تفصیلات کے مطابق ڈائریکٹر جنرل (اصلاح آبپاشی) پنجاب ملک محمد اکرم نے کہا کہ کاشتکاروں کو جدید نظام آبپاشی کی تنصیب کے فروغ کے لئے نیشنل بینک آسان شرائط پر قرضہ کی سہولت فراہم کرے گا،ترجمان محکمہ زراعت پنجاب نے بتایا ہے کہ کاشتکاروں کو جدید نظام آبپاشی کی تنصیب کے لئے آسان شرائط پر قرضہ جات کی فراہمی کے لئے زراعت ہاؤس میں شعبہ اصلاح آبپاشی اور نیشنل بینک آف پاکستان کے مابین ایم او یو پر دستخط ہوئے،جس کی رو سے نیشنل بینک آف پاکستان ایسے کاشتکاروں کو آسان قرضہ کی سہولت فراہم کرے گا،جو محکمہ زراعت پنجاب کے شعبہ اصلاح آبپاشی کے تحت ڈرپ / سپرنکلر نظام آبپاشی اور سولر سسٹم کی تنصیب کروائیں گے،یاد رہے شعبہ اصلاح آبپاشی کاشتکاروں کو ڈرپ و سپرنکلر نظام آبپاشی پر 60 فیصد سبسڈی جبکہ سولر نظام آبپاشی پر 50 فیصد سبسڈی فراہم کر رہا ہے،ترجمان نے مزید بتایا کہ نیشنل بینک پاکستان کاشتکاروں کے ذمہ باقی رقم کی ادائیگی کے لئے آسان شرائط پرقرضہ فراہم کرے گا،جس سے جدید نظام آبپاشی کی تنصیب کو فروغ حاصل ہوگا،اس موقع پر ڈائریکٹر جنرل (اصلاح آبپاشی) ملک محمد اکرم نے کہا کہ نیشنل بینک پاکستان کا یہ قدم اس اعتبار سے خوش آئند ہے کہ کاشتکاروں کو جدید نظام آبپاشی کی تنصیب کیلئے اپنے حصہ کی رقم باآسانی میسر آئے گی،جس سے جدید نظام آبپاشی کو فروغ، پانی کی بچت اور فی ایکڑ زرعی پیداوار میں اضافہ ممکن ہو سکے گا، تقریب میں ڈائریکٹر جنرل (اصلاح آبپاشی) ملک محمد اکرم اور گروپ چیف نیشنل بینک آف پاکستان رحمت علی حسنی نے معاہدہ پر دستخط کئے،تقریب میں ڈائریکٹر زرعی اطلاعات پنجاب محمد رفیق اختر اور نیشنل بینک کے نمائندگان فواد محسن، ونگ ہیڈ ممتاز فاروق، محمد اکبر اشرف، یاسر ملک، ڈاکٹر خرم شہزاد، ڈاکٹر زاہد اقبال اور اعجاز ماجد نے شرکت کی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں