23

مرکزی تنظیم تاجران پاکستان کا خواجہ شاہد رزاق کے ساتھ نازیبا رویہ اختیار کرنے والے ایس پی احمد ارسلان کو تین روز میں نوکری سے برخواست کرنیکا مطالبہ

فیصل آباد(نمائندہ پی این این اردو)مرکزی تنظیم تاجران پاکستان کے رہنماؤں نے سرپرست اعلیٰ خواجہ شاہد رزاق سکا کے ساتھ نازیبا رویہ اختیار کرنے والے ایس پی احمد ارسلان کو تین روز کے اندر اندر نوکری سے برخواست کرنے کی ڈیڈ لائن دے دی ہے اور ایس پی کو فارغ نہ کرنے پر 24اگست بروز منگل کو فیصل آباد گھنٹہ گھر میں غیر معینہ مدت کے لئے احتجاجی دھرنا دینے کا اعلان کردیا ہے،یہ اعلان مرکزی تنظیم تاجران پاکستان کے مرکزی چیئرمین خواجہ سلیمان صدیقی، مرکزی سیکرٹری اطلاعت محبوب عالم جٹ، صدر جنو بی پنجاب شیخ جاوید اختر، مرکزی نائب صدر ملک عامر اعوان، جنرل سیکریٹری جنوبی پنجاب زیشان صدیقی، چیئرمین ملتان کاشف رفیق، اور فیصل آباد کے مختلف تاجر رہنماؤں ہمراہ فیصل آباد میں پریس کانفرنس کے دوران کیا،خواجہ سلیمان صدیقی نے مزید کہا کہ خواجہ شاہد رزاق سکا تنظیم تاجران کے بزرگ سرپرست اعلی ہیں،جن کے ساتھ ایس پی احمد ارسلان نے نازیبا رویہ اختیار کرکے غیر ذمہ دارانہ اقدام کیا جس کی وجہ سے فیصل آباد سمیت ملک بھر کی تاجر برادری میں شدید تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے اور وہ سراپا احتجاج ہیں ایسے نااہل آفیسر کو فی الفور نوکری سے برخواست نہ کیا گیا تو احتجاج کا دائرہ کار ایوانوں تک پہنچ جائے گا،اسی لئے صوبائی حکومت پنجاب سنجیدگی سے نوٹس لے،انہوں نے کہا کہ تاجربرادری نے ہمیشہ حکومت اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ساتھ تعاون کیا اور اس کا صلہ یہ دیا جارہا ہے کہ بزرگ تاجر رہنماؤں کے ساتھ پولیس ہتک آمیز رویہ اختیار کر رہی ہے جس کی جتنی مذمت کی جائے وہ کم ہے انہوں نے مزید کہا کہ ایف بی آر کا دوبارہ چھوٹے تاجروں کو نوٹس بھیجنا انتہائی تشویشنا ک عمل ہے چھوٹے تاجر پہلے ہی کرونا وباء کی وجہ سے گذشتہ دوسالوں کے دوران جاری لاک ڈاؤن کی وجہ سے شدید پریشانی سے دوچار ہیں،کیونکہ کرونا وباء کی وجہ سے ان کے کاروبار زندگی متاثر ہو چکے ہیں یہاں تک کہ ان کے لئے گھریلواخراجات پورے کرنا انتہائی مشکل ہوچکا ہے ہونا تو یہ چاہئے تھا کہ چھوٹے تاجروں کو مستحکم کرنے کے لئے بلاسود قرضے دیئے جاتے لیکن اس کے برعکس چھوٹے تاجروں کو دوبار ہ ٹیکس دینا انہیں ایک بار پھر سڑکوں پر لانے کے مترادف ہے،اسی لئے حکومت ایسا کوئی اقدام نہ کرے کہ لاکھوں چھوٹے تاجر دوبارہ سڑکوں پر نکلنے پر مجبور ہو جائیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں