11

معرکہ کربلا حق و باطل کے درمیان فرق کا نام ہے،ڈاکٹر اکمل مدنی

ملتان(سٹاف رپورٹر)معرکہ کربلا حق و باطل کے درمیان فرق کا نام ہے،چیئرمین متحدہ مسلم موومنٹ پاکستان ڈاکٹر محمد اکمل مدنی اور ایگزیکٹیو ممبران نے یوم عاشور کی مناسبت سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سیدنا امام حسینؓ نیاپنی قربانیاں پیش کرکے اسلام کے مرجھائے پھول کی آبیاری کی،آپ ؓ کی شہادت سے واضع ہوگیا کہ اسلام میں جبر،ملوکیت اور ظلم و تشدد کا کوئی بھی نظام نہیں چل سکتا،فلسفہ شبیری کو مشعل راہ بنا کر تمام تر مسائل و پریشانیوں سے پیچھا چھڑایا جاسکتا ہے،چیئرمین متحدہ مسلم موومنٹ پاکستان ڈاکٹر محمد اکمل مدنی نے کہا کہ معرکہ کربلا حق و باطل کے درمیان فرق کا نام ہے،یوم عاشور سیدنا امام حسین ؓنے اپنے رشتہ داروں اور رفقا کی قربانیاں پیش کرکے جس طرح اسلام کے مرجھاتے ہوئے پھول کی آب یا ری کی وہ رہتی دنیا تک کیلئے روشن مثال ہے،آپؓ نے باطل قوتوں کے سامنے ڈٹ کر مقابلے کرتے ہوئے یہ ثابت کیا کہ دشمن کتنا ہی طاقتور کیوں نہ ہو اس کا مقابلہ دلیری و جوان مردی سیکیا جائے،امام حسین ؓ نے راہ خدا میں اپنی جان پیش کرکے یہ ثابت کیا کہ اسلام میں جبر،ملوکیت،ظلم وتشدد کا کوئی بھی نظام نہیں چل سکتا اور سب سے بڑی طاقتور ذات رب تعالی کی ہے جس نے یہ کائنات خلق ہے،ان خیالات کا اظہار یوم عاشور کی مناسبت سے اپنی خصوصی گفتگو میں کیا،انہوں نے کہا کہ اگر دنیا بھر کے مسلمان فلسفہ شبیری پر عمل کرتے ہوئے آگے بڑھیں تو انہیں درپیش تمام مسائل اپنے آپ حل ہوجائیں گے،جنرل سیکرٹری ایڈووکیٹ کاشف بوسن،چیف آرگنائزر ملک سلطان محمود،نائب صدرعلامہ عنایت اللہ رحمانی،نائب صدر مولانا عون نقوی،نائب صدر مولانا مختار راٹھور،سنٹرل ایگزیکٹو پروفیسر ماجد وٹو نے کہا کہ محرم الحرام کے ایام مخصوصہ تمام مذاہب و مسالک کے افراد سے اتحاد،اتفاق اور صبر کا تقاضا کررہے ہیں اور یہی یوم عاشور کا پیغام بھی ہے کہ اپنی صفوں میں موجود شرپسند عناصر کا مل کر خاتمہ کیا جائے تاکہ انسانیت کے خلاف ان کی کوئی بھی شرانگیزی کامیاب نہ ہوسکے۔ممبر سپریم کونسل شیخ صلاح الدین،صدر ملتان ڈویژن ظفر قریشی،ضلعی صدر ملک عمران یوسف،جنرل سیکرٹری شیخ حمید،صدر فیڈرل چیپٹرایڈووکیٹ محمد شاہ، مرکزی ممبر ایگزیکٹو سپریم کونسل محمد ایوب مغل اورسنٹرل ایگزیکٹیو بریگیڈئیر شوکت عثمان ملک نے کہا کہ یوم عاشور جنت کے آٹھوں دروازے کھول دئیے جاتے ہیں اس بابرکت دن کی مناسبت سے ہر ایک مسلمان کو یہ عہد کرنا ہوگا کہ وہ خلق خدا کی ہر ممکن مدد و حمایت کو یقینی بناتے ہوئے احکامات الہیہ کی پاسداری کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں