28

ملتان،انسٹیٹیوٹ آف کڈنی ڈیزیز میں گردے کا پہلا کامیاب ٹرانسپلانٹ،کمشنر جاوید اختر محمود کی ڈونر اور مریض سے ملاقات

ملتان(ہیلتھ رپورٹر)جنوبی پنجاب میں صحت کی جدید سہولیات کی فراہمی کا ایک اور سنگ میل عبور کرلیا گیا،ملتان انسٹیٹیوٹ آف کڈنی ڈیزیز میں گردے کا پہلا کامیاب ٹرانسپلانٹ کر لیا گیا،کمشنر ملتان ڈویژن جاوید اختر محمود نے کڈنی سنٹر کا دورہ کیا،اور ڈونر اورمریض سے ملاقات کی،وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار صحت کے شعبے میں اصلاحات کو از خود مانیٹر کررہے ہیں،صحت کی سہولیات تک شہریوں کی سہل رسائی حکومت پنجاب کی ترجیح ہے،انہوں نے مزید کہا کہ کڈنی کی پیوندکاری کرنے والی ٹیم مبارکباد کی مستحق ہے،کڈنی ٹرانسپلانٹ سے اس خطے کے لاکھوں مریضوں کو نئی زندگی ملے گی،انہوں نے کہا کہ مریض اور ڈونر دونوں روبہ صحت ہیں اور یہ ان سے ملکر انتہائی خوشی ہوئی،۔کمشنر جاوید اختر محمود نے کہا کہ گردے کی مفت پیوندکاری سے غیر قانونی دھندہ کرنے والوں کی حوصلہ شکنی ہوگی،اس موقع پر ہیڈ انسٹیٹیوٹ آف کڈنی ڈیزیز ڈاکٹر علی عمران زیدی نے کہا کہ مریض وقار کو انکی اہلیہ غزالہ نے گردہ عطیہ کیا ہے،مریض کو ایک سال تک مفت ادویات فراہم کی جائیں گی،ڈونر خاتون کو بھی انڈر آبزرویشن رکھا جائے گا،ایک سال میں گردہ پیوندکاری کے 24 مفت آپریشن کئے جائیں گے، انہوں نے کہا کہ ملتان انسٹیٹیوٹ آف کڈی ڈیزیز کو گردہ کی پیوندکاری کی اجازت ملنا اعزاز ہے،انسانی اعضاء کی منتقلی کے عمل کو محفوظ ترین بنانے کیلئے اقدامات کئے گئے ہیں،انسانی اعضاء عطیہ کرکے قیمتی انسانی جان کو بچایا جاسکتا ہے،سرجن ٹیم میں ڈاکٹر علی عمران زیدی، ڈاکٹر سلمان ارشد،ڈاکٹر تنویر الحق شامل تھے۔علاوہ ازیں ڈونر، مریض نے کڈنی انسٹیٹیوٹ کی تعریف کی اور سہولیات پر اطمینان کا اظہار کیا۔ڈونر نے کہا کہ سرکاری ہسپتال میں مفت اور بہترین سہولیات سے دل خوش ہوگیا،جبکہ مریض نے بتایا کہ متعدد ہسپتالوں سے مایوس ہوکر کڈنی سنٹر ملتان میں آپریشن کروایا جس سے مطمئن ہوں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں