9

ملتان،بر طرف 650 یوٹیلٹی سٹور ملازمین کی تنخواہیں روکنے کا حکم

ملتان(سٹاف رپورٹر)سپریم کورٹ آف پاکستان کی جانب سے سیکڈ ملازمین بحالی ایکٹ کا خاتمہ، یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن آف پاکستان کے 650 ملازمین کی تنخواہیں اور الاؤنسز روکنے کا حکم جاری کردیا،ملازمین میں تشویش کی لہر دوڑ گئی،تفصیل کے مطابق سپریم کورٹ آف پاکستان کی جانب سے گزشتہ حکومتوں کے دور میں سیکڈ ملازمین بحالی ایکٹ کے تحت بحال ہونے والے ملازمین کے گھروں کا چولہا ٹھنڈا پڑ گیا،دیگر محکموں کی طرح یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن آف پاکستان کے بھی 650 ملازمین کی شامت آگئی،سپریم کورٹ آف پاکستان کی جانب سے 17 اگست کو سیکڈ ملازمین ایکٹ 2010 کے خلاف آنے والے فیصلے پر عملدرآمد شروع کردیا گیا ہے،اس حوالے سے یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن آف پاکستان کے جنرل منیجر (ایچ۔ آر اینڈ اے) کی جانب سے جاری ہونے والے لیٹر میں تمام زونل منیجرز کو کہا گیا ہے کہ سپریم کورٹ آف پاکستان کے فیصلے پر فوری عملدرآمد کرتے ہوئے 650 ملازمین کے تنخواہیں اور الاؤنسز فوری طور پر روک دیں،اس حوالے سے ملازمین میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے اور سربراہ آل پاکستان ورکرز الائنس یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن عارف حسین شاہ نے کہا ہے کہ سیکڈ ملازمین بحالی ایکٹ 2010 کا خاتمے کے فیصلے سے 16 ہزار ملازمین کا معاشی قتل ہوگا،چیف جسٹس آف پاکستان نوٹس لیں۔اور فوری طور پر اسے معطل کریں۔ صدر پاکستان اور وزیر اعظم عمران خان اس فیصلے پر عمل درآمد فوری طور پر روکیں۔ اگر سیکڈ ملازمین کو انصاف نہ دیا گیا تو بھرپور احتجاج کیا جائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں