15

ملتان،محکمہ زراعت پیسٹ وارننگ ٹیم کی کارروائی،23لاکھ روپے سے زائد مالیت کی جعلی زرعی ادویات برآمد

ملتان(سٹاف رپورٹر)محکمہ زراعت پنجاب کی جعلی زرعی ادویات کے کاروبار میں ملوث افراد کے خلاف کارروائیاں جاری ہیں،ایسے ہی ایک آپریشن میں سیکرٹری زراعت جنوبی پنجاب ثاقب علی عطیل کی ہدایت پر اسسٹنٹ ڈائریکڑ پیسٹ وارننگ ملتان شاہد حسین اور زراعت آفیسر ولی محمد ودیگر نے پولیس پارٹی تھانہ ممتاز آباد کے ہمراہ ملتان میں واقع پیر بخاری کالونی میں ایک گودام میں کامیاب چھاپہ مارکر جعلی زرعی ادویات ودیگر مٹیریل برآمد کرلیا،موقع پر پکڑی جانے والی جعلی زرعی ادویات ودیگر میٹریل کی مالیت تقریباً 23 لاکھ 87 ہزار روپے بنتی ہے،موقع پر سٹارلٹ کیمیکلز اور فرٹیلائزرز کے نام سے جعلی کھلی و پیک شدہ کاربوفیوران اورکارٹیپ برآمد کی گئی،ملزم ندیم مشتاق کو موقع سے گرفتارکرکے اس کے خلاف پیسٹی سائیڈز آرڈیننس کے تحت پیسٹی سائیڈ انسپکٹر ولی محمد کی مدعیت میں تھانہ ممتازآباد میں ایف آئی آر کے اندراج کیلئے استغاثہ جمع کرادیا گیا ہے،موقع پر لیبلز پر امپورٹر، مینوفیکچرر، فارمولیٹر، ڈسٹری بیوٹر، تاریخ تیاری، تاریخ ایکسپائر، بیچ نمبر، رجسٹریشن نمبر، پیک کنندہ کی بابت جعلی معلومات درج تھیں،ملزمان جعلی زرعی ادویات غیر قانونی طریقے سے پیکنگ وفارمولیٹ کرکے ملک کے مختلف حصوں میں سپلائی کرکے ملکی معیشت کو ناقابل تلافی نقصان پہنچا رہے تھے،پکڑی جانیوالی جعلی زرعی ادویات بطور مال مقدمہ قبضہ میں لیکر حوالہ پولیس کردی گئیں،موقع پرزرعی ادویات کے نمونہ جات حاصل کرکے تجزیہ کیلئے لیبارٹری بھجوا دئیے گئے،موجودہ حکومت جعلی زرعی ادویات کا کاروبار کرنے والوں کے خلاف زیرو ٹالرنس پالیسی کے اصول پر عمل پیرا ہے اور اس کاروبار کی بیخ کنی کیلئے تمام ممکنہ کارروائیاں عمل میں لائی جارہی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں