17

ملک بھر سے لوگ رابطے کر رہے ہیں ، عوامی طاقت سے اقتدار میں آئینگے،یوسف رضا گیلانی

ملتان(سٹاف رپورٹر)سابق وزیراعظم و سینیٹ میں قائد حزبِ اختلاف مخدوم سید یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ ہم چور دروازے سے نہیں بلکہ عوامی طاقت سے اقتدار میں آئیں گے، ہم خاموش مفاہمت کے حق میں نہیں ہیں، پیپلزپارٹی میں شمولیت کیلئے صرف جنوبی پنجاب سے ہی نہیں بلکہ ملک بھر سے لوگ رابطہ کر رہے ہیں،خارجہ پالیسی کے بارے میں کچھ کہہ نہیں سکتا کیونکہ اس کا تعلق ملتان سے ہے،لیکن ہمیں سوچنا ہے کہ کمی کہاں پر ہے،ملک آرڈیننسوں پر چل رہا ہے جبکہ ہمارے دور میں پارلیمنٹ سے متفقہ قانون سازی ہوتی تھی،بلاول بھٹو زرداری دورہ جنوبی پنجاب کے سلسلہ میں 3 ستمبر کو ملتان پہنچیں گے اور 7 ستمبر کو ان کی واپسی ہوگی،ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنی رہائشگاہ پر منعقد پریس کانفرنس کے دوران کیا،پریس کانفرنس میں ان کے ہمراہ رکن صوبائی اسمبلی علی حیدر گیلانی، خواجہ رضوان عالم، شازیہ عابد، ڈاکٹر جاوید صدیقی، خالد حنیف لودھی، ملک نسیم لابر، نفیس انصاری، اے ڈی بلوچ، شیخ غیاث الحق ایڈووکیٹ، عارف شاہ، ایم سلیم راجہ، چوہدری یسین، خواجہ عمران بشیر، رؤف لودھی، ملک ذوالفقار بھٹہ، محمد امین و دیگر بھی شریک تھے۔ سید یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ پی ٹی آئی نے تین ماہ میں صوبہ بنانے کا وعدہ کیا تھا مگر تین سال میں صرف ایک ادھورا سیکرٹریٹ دیا جو کہ ملتان اور بہاولپور میں متنازعہ ہے اور جس کا کریڈٹ دونوں شہروں کے ایم این ایز لے رہے ہیں۔ ہم نے تو صوبہ کی ڈیمانڈ کی تھی سیکرٹریٹ تو مانگا ہی نہیں تھا،انہوں نے کہا کہ صوبہ ہم بنائیں گے،سیکرٹریٹ کا فیصلہ صوبہ بننے کے بعد متفقہ طور پر کریں گے،اس حکومت نے تو روزگار اور گھر دینے کے بجائے لوگوں سے روزگار اور گھر چھینے ہیں،یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ میڈیا پر پابندیاں لگ رہی ہیں ایسا تو آمریت کے دور میں نہیں ہوا،مجوزہ میڈیا اتھارٹی کو مسترد کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چیئرمین بلاول بھٹو زرداری 3 ستمبر کو جنوبی پنجاب کے دورے پر ملتان پہنچیں گے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان کا احترام کرتے ہیں ان کی کسی بات کا جواب نہیں دینا چاہتے وہ استعفوں کی بات کرتے ہیں اور ہم ان ہاؤس تبدیلی کے حق میں ہیں،میاں نواز شریف کو پیپلزپارٹی سے نہیں پی ٹی آئی سے شکایت ہے، پی ڈی ایم سے رابطوں کے بارے میں سی ای سی فیصلہ کرے گی،انہوں نے کہا کہ حکومت پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس بلا کر متفقہ افغان پالیسی بنائے،ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ خطے میں بدلتی صورتحال کے پیش نظر پیپلزپارٹی کی اہمیت بہت بڑھ گئی ہے،ہم چور دروازے سے نہیں بلکہ عوامی طاقت سے اقتدار میں آ رہے ہیں،پیپلزپارٹی میں شمولیت کے لئے صرف جنوبی پنجاب سے ہی نہیں بلکہ ملک بھر سے لوگ رابطے کر رہے ہیں،ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ خارجہ پالیسی کے حوالے سے کچھ نہیں کہہ سکتا کیونکہ اس کا تعلق ملتان سے ہے لیکن ہمیں سوچنا ہوگا کہ کمی کہاں پر ہے،دریں اثنا یوسف رضا گیلانی سے سابق وزیراعظم و صدر سردار یعقوب خان، اپوزیشن لیڈر قانون ساز اسمبلی آزاد جموں و کشمیر چوہدری لطیف اکبر، ایم ایل اے جاوید ایوب، ایم ایل اے میاں وحید نے گیلانی ہاؤس میں ملاقات کی اور اس موقع پر سید یوسف رضا گیلانی سے کشمیر الیکشن میں ان کی بھرپور حمایت کرنے پر شکریہ ادا کیا اور موجودہ ملکی سیاسی صورتحال پر تفصیلی گفتگو کی اس موقع پر ایم پی اے سید علی حیدر گیلانی بھی موجود تھے،سید یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ مظلوم کشمیریوں کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی، پیپلز پارٹی کی بنیاد مسئلہ کشمیر ہے اور آج عمران خان آزاد کشمیر میں جس ریفرنڈ م کی جو بات کر رہے ہیں اس کو کلی طور پر ہم مسترد کرتے ہیں وہ کشمیریوں کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔ بعدازاں آزاد جموں و کشمیر کے اراکین اسمبلی گڑھی خدا بخش لاڑکانہ روانہ ہو گئے جہاں وہ شہید ذوالفقار علی بھٹو، شہید بے نظیر بھٹو کے مزار پر فاتحہ خوانی کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں