11

نوازشریف کو لندن بھجوانے کا فیصلہ حکومت کا تھا،شہباز شریف

لاہور(بیورو رپورٹ)پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر اور قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر میاں محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ سابق وزیراعظم نوازشریف کو لندن بھجوانے کا فیصلہ حکومت کا تھا،اپنے ایک بیان میں لیگی صدر کا کہنا تھا کہ سیاسی نفرت پر مبنی حکومتی بیانات پاکستان کے وقار کے منافی ہیں، سیاسی پگڑیاں اچھالنے والے پاکستان کی پگڑی نہ اچھالیں تو مہربانی ہو گی، سیاسی فائدے کے لئے حقائق کے برعکس بیانات باعث افسوس ہیں،شہباز شریف کا کہنا ہے کہ 3 بار وزیراعظم رہنے والے نوازشریف کی زندگی پر سیاست بے حسی اور غیرانسانی رویہ ہے،محض سیاست کے لئے ایک فرد کوبدنام کرنے کا حکومتی رویہ پاکستان کی بدنامی کا باعث بن رہا ہے، حکمران ہوش کے ناخن لیں،انہوں نے کہا کہ سابق وزیراعظم نوازشریف کو لندن بھجوانے کا فیصلہ عمران نیازی حکومت کا تھا، ان کا علاج پاکستان میں نہیں ہو سکتا، یہ فیصلہ بھی حکومت کے سرکاری بورڈ کا تھا، ڈاکٹرز کے مشورے کے مطابق نوازشریف کے علاج اور لندن میں قیام کا فیصلہ ہو گا، ڈاکٹرجب اجازت دیں گے تو نوازشریف پاکستان واپس آئیں گے۔ قانونی تقاضوں کو مدنظر رکھتے ہوئے اپیل دائر کر دی گئی ہے۔ اپیل پر فیصلہ ہونے تک محمد نوازشریف قانونی طور پر لندن میں قیام کر سکتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں