9

وزیراعلیٰ پنجاب کی ڈی جی ایم ڈی اے قیصر سلیم کو ملتان کے سیوریج مسائل فوری حل کرنیکی ہدایت

ملتان(سٹاف رپورٹر)ڈائریکٹر جنرل ترقیاتی ادارہ ملتان قیصر سلیم کہا ہے کہ ملتان شہر کا سب سے بڑا مسئلہ سیوریج کا ہے،وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے اولیا کرام کے شہر میں سیوریج مسائل حل کرنے کیلئے مجھے خصوصی ٹاسک دیا ہے،پنجاب حکومت نے بوسیدہ سیوریج لائنوں کی تبدیلی کیلئے واسا ملتان کو خطیر فنڈز مہیا کر دئیے ہیں،تمام ترقیاتی منصوبوں پر کام کی رفتار کو تیز اور کوالٹی آف ورک کو یقینی بنایا جائے،واسا کے فیلڈ آفیسران پبلک سروس ڈیلیوری کو مزید بہتر کریں،ادارے کو مالی بحران سے نکالنے کیلئے سیوریج اور واٹر سپلائی بلوں کی مد میں ماہانہ ریکوری اہداف کو بھی یقینی بنایا جائے،انہوں نے واسا میں افسران اور سٹاف کی شدید کمی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے بھرتی کیلئے سفارشات پنجاب حکومت کو بھجوانے، گریڈ 16 اور اس سے زائد گریڈ کے افسران کی بھرتی کا عمل پنجاب پبلک سروس کمیشن کے ذریعے مکمل کرنے کا بھی حکم دیا،ان خیالات کا اظہار انہوں نے منیجنگ ڈائریکٹر واسا ناصراقبال کی طرف سے ایم ڈی اے کے کمیٹی روم میں دی جانے والی بریفنگ کے دوران کیا،ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل ایم ڈی اے عارف ضیاء،ڈائریکٹر فنانس اینڈ ایڈمن شاکر بزدار،ڈپٹی منیجنگ ڈائریکٹر واسا میڈم نگہت جبیں سمیت واسا کے تمام ڈائریکٹرز بھی موقع پر موجود تھے،اس دوران ایم ڈی واسا نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ واسا ملتان شہر کی65 فیصد آبادی کو نکاسی آب جبکہ 55 فیصد آبادی کو فراہمی آب کی بلاتعطل سہولیات فراہم کر رہا ہے،واسا کے کل 1774 کلومیٹر سیوریج نیٹ ورک میں سے 1236کلومیٹر کی سیوریج لائنیں بوسیدہ ہو چکی ہیں،جس سے آئے روز کراؤن فیلیئر کے واقعات کا سامنا رہتا ہے،اسی طرح واٹر سپلائی کی 1448 کلومیٹر لائنوں میں سے 1 ہزار کلومیٹر سے زائد کی لائینں اپنی عمر پوری کر چکی ہیں،واٹر سپلائی سسٹم بھی بوسیدہ ہونے کی وجہ سے اس وقت شہر بھر میں واٹر سپلائی کی مکسنگ کی شکایات میں اضافہ ہو چکا ہے،اس وقت شہر کے مختلف علاقوں میں سیوریج کی بوسیدہ لائنوں کی سوا دو ارب روپے جبکہ واٹر سپلائی کی پرانی لائنوں کی تبدیلی کی 1 ارب روپے کی سکیم پر تیزی سے عملدرآمد جاری ہے ایم ڈی واسا نے مزید بتایا کہ ملتان شہر میں 297 ملین گیلن روزانہ سیوریج کا پانی حاصل ہو رہا ہے،سورج میانی ویسٹ واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹ 184 ایکڑ رقبے اور 11 کلومیٹر طویل سلج کیریئر پر مشتمل ہے،اس منصوبے کے ذریعے ملتان شہر کا 59 ملین گیلن روزانہ سیوریج کا پانی ٹریٹمنٹ کے بعد بغیر کسی آپریشنل چارجز کے قدرتی انداز میں دریائے چناب میں ڈالا جا رہا ہے اور اب شہر کے ساؤتھ اور سینٹرل زون کا 238 ملین گیلن روزانہ کی بنیاد پر حاصل ہونے والا سیوریج کا پانی شیر شاہ کے قریب انبالہ کے مقام پر ٹریٹمنٹ پلانٹ اور 35 کلومیٹر طویل سلج کیریئر کے ذریعے ٹریٹ کرکے دریا میں ڈالنے کے منصوبے پر بھی کام جاری ہے،انہوں نے واسا میں افسران و سٹاف کی کمی اور 793 سیٹیں خالی ہونے، ریکوری کی صورتحال 17 سالوں سے واسا ٹیرف میں اضافہ نہ ہونے ،اخراجات میں کئی سو گنا اضافے کی وجہ سے درپیش مالی بحران، بوسیدہ مشینری سمیت دیگر مسائل سے بھی آگاہ کیا،جس پر ڈائریکٹر جنرل ترقیاتی ادارہ ملتان قیصر سلیم نے کہا کہ واسا تمام تر توجہ درینہ واجبات کی وصولی اور ماہانہ ریکوری پر مرکوز اور پبلک سروس ڈیلیوری کو مزید بہتر کرے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں