6

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے پی ٹی آئی رہنما قربان فاطمہ کی ملاقات

ملتان،وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ مسئلہ فلسطین پر نہ صرف پاکستان بلکہ امت مسلمہ کی بھرپورترجمانی کی ۔فلسطین کی جنگ بندی میں ہمارے کردارپر نہ فلسطینی مسلمانوں بلکہ مسلمہ امہ نے بھی پاکستان کے کردار کو سراہا۔ فلسطین کے ساتھ ساتھ کشمیر کے مسئلہ کو بھی اجاگر کیا۔ ایک طویل عرصہ بعد تحریک انصاف کی حکومت نے مسئلہ کشمیر کو از سر نو زندہ کیا۔ ہمارے اقدامات کی بدولت مسئلہ کشمیر ایک خطے کا نہیں بلکہ عالمی مسئلہ ہے۔ جسے اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کرنا ہوگا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی ٹی آئی رہنما قربان فاطمہ سے ملاقات کرتے ہوئے کیا،جنہوں نے وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کو مسئلہ فلسطین پر کامیاب سفارت کاری پر مبارک باد پیش کی اور پھولو ںکا گلدستہ پیش کیا۔ وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا اسلام فوبیا کے بڑھتے ہوئے روجحانات مسلم امہ کیلئے لمحہ فکریہ ہے۔ ہمیں اسلام فوبیا کے بڑھتے ہوئے روجحانات پر تشویش ہے۔ اس کو کم کرنے کیلئے مسلم امہ کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگااور مسلم امہ میں یکجہتی پیدا کرناہوگی۔ انہوں نے کہا ضرورت اس امر کی ہے کہ ہم اسلامی تعلیمات کا قرآن و سنت کے مطابق پرچار کریں ۔ انہوں نے کہا میرے لیے یہ اعزاز کی بات ہے کہ میں نے مسئلہ فلسطین پر عالمی برادری کے ضمیر کو جگایا جس کی بدولت اسرائیل جنگ بندی پر آمادہ ہوا ۔ انہوں نے کہا مسئلہ کشمیر 65 سال بعدسلامتی کونسل میں دوبارہ زیر بحث آیا یہ ہماری بہت بڑی سفارتی کامیابی ہے ۔ انہوں نے کہا وزیراعظم پاکستان عمران خان کی قیادت میں پاکستان کا وقار بلند کرنے اور ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا ہم سفارتی کاری کے جدید پہلوں اور بلخصوص معاشی سفارت کاری پر توجہ دے رہے ہیں۔ جس کی بدولت ملک میں غیر ملکی سرمایہ کارو ںکوراغب کیا جاسکے گا ۔ جس کی بدولت نہ صرف ملکی معشیت مضبوط ہوگی اور روزگار میں بھی اضافہ ہوگا۔پی ٹی آئی رہنما قربان فاطمہ نے کامیاب سفارت کاری اور مسلم امہ کا بھر پور مقدمہ لڑنے پر وزیراعظم عمران خان اور وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کو بھر پور خراج تحسین پیش کیا.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں