13

چلڈرن ہسپتال ادویہ خریداری کرپشن،گرفتار 3 ملزمان کی درخواست ضمانت پر سماعت 11 اگست تک ملتوی

ملتان(نیوز رپورٹر)لاہور ہائیکورٹ ملتان کے دو ججز مسٹر جسٹس مزمل اختر شبیر اور مسٹر جسٹس علی ضیاء باجوہ پر مشتمل ڈویژن بینچ نے چلڈرن کمپلیکس ہسپتال ملتان میں ادویات خریداری میں مبینہ طور پر ایک کروڑ روپے سے زائد کی کرپشن کرنے کے مقدمہ میں گرفتار تین ملزمان کی درخواست ضمانت پر سماعت 11 اگست تک ملتوی کرنے کا حکم دیا ہے۔ عدالت نے کیس ٹرائل شروع نہ ہونے پر بھی جواب طلب کر رکھا ہے۔قبل ازیں عدالت عالیہ میں چیف ایگزیکٹو میڈیسن کمپنی محمد جہانگیر بھٹی نے کونسل شیخ جمشید حیات کے ذریعے درخواست ضمانت دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا تھا کہ ہسپتال کے اکاؤنٹنٹ تبشر نقوی اور ایک ملازم عدیل نے ان کی کمپنی کے لیٹر پیڈ پر کوٹیشن دی اور آپس میں ملی بھگت کرکے جعلی ووچرز کے ذریعے رقم نکال لی جبکہ ادویات کی سپلائی نہیں کی گئی وہ 7 نومبر 2019 سے گرفتار ہوکر جیل میں قید ہے۔ قبل ازیں اینٹی کرپشن نے انکے خلاف مقدمہ درج کیا تھا بعدازاں 40 لاکھ روپے کی ادویات کی کمی کا اندازہ لگایا گیا اور تبشر نقوی نے آڈٹ پیراز کی بنیاد پر یہ رقم سرکاری خزانے میں جمع کرادی اینٹی کرپشن نے کیس کا چالان احتساب عدالت کو بھجوایا ڈیڑھ سال کا عرصہ گزرنے کے باوجود فرد جرم عائد نہیں کی گئی اس لئے وہ ضمانت کے مستحق ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں