5

چیف سیکرٹری اور آئی جی پنجاب کو تبدیل کرنے کا فیصلہ

لاہور(بیورو رپورٹ)وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے چیف سیکرٹری جواد رفیق ملک اور آئی جی پنجاب انعام غنی کو تبدیل کرنے کا فیصلہ کر لیا،وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان متحرک ہو گئے، انتظامی اور سیاسی محاذ پر بڑی تبدیلیوں کا فیصلہ کر لیا، انتظامی طور پر بہترین پرفارمنس کے لئے چیف سیکرٹری کی تبدیلی کیساتھ ساتھ پنجاب پولیس کے حوالے سے فیڈ بیک کے بعد آئی جی کی جلد تبدیلی بھی ممکن ہے،دوسری طرف سیاسی ٹیم میں بھی تبدیلیوں پر غور کیا جانے لگا، وزراء کے محکموں میں ردوبدل کا امکان ہے،اُدھر وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نےعوامی مسائل کے حل کیلئےکمرکس لی، کھلی کچہری میں 4 گھنٹے تک مسلسل عوام کے مسائل سنتے رہے،وزیراعلیٰ نے سینکڑوں لوگوں سے فرداً فرداً ملاقاتیں کیں اور ان کے مسائل کے حل کے لئے موقع پر ہی احکامات جاری کئے،وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے عوامی خدمت کی ایک اور عمدہ مثال قائم کر دی،وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے جنوبی پنجاب کے دور دراز علاقوں کے لوگوں کے مسائل کے حل کیلئے 90 شاہراہ قائد اعظم لاہورپر کھلی کچہری کا انعقاد کیا۔ وزیراعلیٰ نے کھلی کچہری میں سینکڑوں لوگوں سے فرداً فرداً ملاقاتیں کیں اور ان کے مسائل کے حل کے لئے موقع پر ہی احکامات جاری کئے،کھلی کچہری میں دور دراز علاقوں سے آنے والی خواتین نے بھی شرکت کی،معذور نوجوانوں نے بھی وزیراعلیٰ عثمان بزدار سے ملاقات کی اور مسائل سے آگاہ کیا،وزیر اعلی عثمان بزدار نے معذور نوجوانوں کے مسائل کے حل کے لئے متعلقہ حکام کو موقع پر ہدایات دیں،وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو معمر خاتون نے وزیراعظم عمران خان کی تصویر پیش کی،وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے اپنی والدہ کے ساتھ آنے والی بچی سے اظہار شفقت کیا،خاتون نے وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو ان کا پنسل سکیچ پیش کیا،عثمان بزدار نے خواتین کے مسائل سن کر فوری کارروائی کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ عوام سے ہوں اور عوامی مسائل کے حل کے لئے کوئی کسر اٹھا نہ رکھوں گا، لوگوں کے مسائل کے حل میں تاخیر قعطاً برداشت نہیں، عوام کے مسائل حل کرنا میری ذمہ داری ہے، پسماندہ عوام کے مسائل حل کرنے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے،جن کی ماضی میں کوئی نہیں سنتا تھا آج میں ان کا وکیل ہوں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں