6

ڈکیتی کی وارداتوں میں مطلوب ملزم،پولیس تھانہ ٹبہ سلطان پور کے تشدد سے ہلاک

پولیس تھانہ ٹبہ سلطان پور میں ڈکیتی کی وارداتوں میں مطلوب ملزم پولیس تشدد سے ہلاک ہوگیا،جبکہ ملزم کو ایلیٹ فورس نے میلسی روڈ سے گرفتار کرکے پولیس تھانہ ٹبہ پور کے حوالے کیا تھا،جہاں پر پولیس تھانہ ٹبہ پور کا ایس ایچ او رات بھر تارچر کرتا رہا،جس پر ملزم کو رورل ہیلتھ سنٹر ٹبہ سلطان پور لایا گیا جو کہ پہلے ہی ہلاک ہوچکا تھا،تفصیل کے مطابق پولیس تھانہ ٹبہ سلطان پور کو ایلیٹ فورس نے ڈکیتی کی وارداتوں میں ملوث ملزم ریاض ولد امیر سکنہ خیرپورٹامیوالی کو گرفتار کرکے دیا تھا،جس پر ایس ایچ او تھانہ ٹبہ سلطان پور سب انسپکٹر عدنان جمیل ٹیپو نے دیگر اہلکاروں اور رضاکاروں سے ملکر ٹارچر سیل میں رات بھر تشدد کا نشانہ بنایا جس پر ملزم ریاض کی حالت غیرہوگئی جس پر پولیس تھانہ ٹبہ سلطان پور کے اہلکار ملزم ریاض کو رورل ہلیتھ سنٹر لے کر آئے جو کہ پہلے ہی مردہ حالت میں تھا،جبکہ متوفی ریاض کی نعش کو پوسٹمارٹم رپورٹ کیلئے ڈی ایچ کیو ہسپتال وہاڑی بھجوادیا گیا ہے،زرائع سے معلوم ہوا ہے کہ پولیس ملزم کی ہلاکت کو غلط رنگ دینے کیلئے حکمت عملی میں مصروف ہیں،جبکہ پولیس موقف کے مطابق ملزم کی ہلاکت دل کا دورہ پڑنے سے ہوئی ہے،جبکہ پتہ چلنے پر ایس ایچ او تھانہ ٹبہ سلطان پور عدنان جمیل ٹیپو اور دیگر اہلکار سائیڈ پر ہوگئے،اور تھانہ مترو کے ایس ایچ او کو ٹبہ سلطان پور میں رات بھر بٹھایا گیا،تھانہ ٹبہ سلطان پور نے بتایا کہ دوران تفتیش ملزم کو ہارٹ اٹیک ہوگیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں