27

کمشنر جاوید اخترمحمود اور پارلیمانی سیکرٹری ندیم قریشی کا اندرون شہر کا دورہ،دہلی گیٹ تا پاک گیٹ قلعے کی ایک کلومیٹر فصیل کی بحالی کا جائزہ


ملتان(سٹاف رپورٹر)شہر کی صدیوں پرانی ثقافت کو اجاگر کرنے کیلئے ڈویژنل انتظامیہ،سیاسی قیادت نے مشترکہ لائحہ عمل ترتیب دیدیا،کمشنر ملتان ڈویژن جاوید اختر محمود، پارلیمانی سیکرٹری برائے اطلاعات ندیم قریشی نے اندرون شہر کا دورہ کیا اور دہلی گیٹ تا پاک گیٹ قلعے کی ایک کلومیٹر فصیل کی بحالی کا جائزہ لیا،کمشنر جاوید اختر محمود نے فیملی پوائنٹ کی تکمیل کیلئے 6 ستمبر کی ڈیڈلائن دیتے ہوئے کہا کہ فصیل کی بحالی کا کام تیز کیا جائے،تمام ادارے آپس کے ربط کو منظم رکھیں تاکہ سرخ فیتہ کلچر کا خاتمہ ہوسکے،انہوں نے مزید کہا کہ ملتان کی تاریخ درخیز ہے،یہاں جنگ و جدل کی داستانوں نے جنم لیا جس کی نشانیاں اندرون شہر میں ملتی ہیں،قدیم تہذیب کے امین دروازے اور فصیل، ملتان کی پہچان ہیں،فصیل کے ساتھ فیملی گزیبو، فوڈ پوائنٹ بنایا جارہا ہے،کمشنر نے مزید کہا کہ مہذب قومیں اپنے تاریخی ورثہ کی حفاظت کرتی ہیں،آثار قدیمہ کے رقبہ جات پر کسی قسم کی تجاوزات کو برداشت نہیں،اندرون شہر میں قائم پبلک ٹوائلٹس فعال کئے جائیں،کمشنر جاوید اختر محمود نے کارپوریشن کو فصیل کے ارد گرد انسداد تجاوزات آپریشن کرنے کا حکم دیتے ہوئے میٹروپولیٹن کارپوریشن، ویسٹ مینجمنٹ کمپنی،پی ایچ اے کا اجلاس طلب کرلیا،پارلیمانی سیکرٹری برائے اطلاعات ندیم قریشی نے کہا کہ ترقی کے سفر نے ہمیں اپنے ثقافتی ورثہ سے دور کر دیا ہے،فصیل کو پبلک کیلئے تفریحی مقام بنارہے ہیں،فصیل قلعے کے 6 دروازوں سے منسلک ہے اور ،صرف 1 کلومیٹر اصلی حالت میں موجود ہے،ملتان قدیم ترین زندہ شہر ہے اور اسکے ورثہ کی حفاظت ضروری ہے،ایم پی اے ندیم قریشی نے ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کو 10 لوڈر رکشے دینے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ اندرون شہر کی بہترین صفائی یقینی بنائی جائے۔ اس موقع پر اسسٹنٹ کمشنر سٹی خواجہ عمیر، ڈی جی پی ایچ اے شفقت رضا، سی او میٹرو پولیٹن کارپوریشن اقبال خان اور دیگر افسران بھی موجود تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں