19

گرین سکولز انیشی ایٹو پروگرام کے حوالے سے جائزہ اجلاس،سکولوں میں کلسٹر کی سطح پر قائم نرسریوں کا دائرہ کار وسیع کرنے کا حکم

ملتان(سٹاف رپورٹر)ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ جنوبی پنجاب کی طرف سے خطے کے تعلیمی اداروں کو سرسبز و شاداب بنانے اور طلبہ کو شجر کاری کی اہمیت و افادیت سے آگاہ کرنے کے لئے گرین سکولز انیشی ایٹو پروگرام پر عمل درآمد تیزی سے جاری ہے، سکولوں میں کلسٹر کی سطح پر قائم نرسریوں کا دائرہ کار وسیع کرنے کا حکم، ضلع مظفر گڑھ تعلیمی اداروں میں 28361 پودے لگا کر پورے پنجاب میں پہلے نمبر پر آ گیا،تفصیلات کے مطابق ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ جنوبی پنجاب کے گرین اینڈ گرے پراجیکٹ پر عمل درآمد کے حوالے سے ایک جائزہ اجلاس ایڈیشنل سیکرٹری (ایڈمن) عطاء الحق کے زیر صدارت ایجوکیشن سیکرٹریٹ کے کمیٹی روم میں منعقد کیا گیا، اجلاس میں ایڈیشنل سیکرٹری (سکولز ایجوکیشن) محمد انصر سیال، ڈپٹی سیکرٹریز خواجہ مظہر الحق، نجم بوٹا، ڈی پی آئی (سکینڈری) جنوبی پنجاب اعزاز احمد جوئیہ، ڈی پی آئی (ایلیمنٹری) جنوبی پنجاب طاہرہ پروین سمیت مختلف اضلاع کے سی ای اوز ایجوکیشن اور متعلقہ تعلیمی افسران نے شرکت کی،اس موقع پر اجلاس کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے ایڈیشنل سیکرٹری عطا الحق نے کہا کہ تعلیمی اداروں کے سربراہان کو گرین اینڈ گرے پراجیکٹ کے تحت تعلیمی اداروں میں جامن، آم، امرود، انار اور دیگر پھل دار درختوں کے پودے لگوانے اور ہر پودا سکول کے کسی نہ کسی طالب علم کے نام معنون کرنے کی ہدایات دی گئی تھیں،انہوں نے کہا کہ اس پراجیکٹ کے تحت ضلع مظفر گڑھ کے سکولوں میں28361، ضلع وہاڑی میں 11069، ضلع بہاول نگر میں 7886، ضلع خانیوال میں 6906، ضلع ملتان میں 5344، ضلع لودھراں میں 2726، ضلع بہاول پور میں 2045، ضلع رحیم یار خان میں 1326، ضلع لیہ میں 709 اور ضلع راجن پور کے تعلیمی اداروں میں 358 پودے لگائے گئے اور سکولوں میں کلسٹر سنٹر کی سطح پر پودوں کی نرسریاں قائم کی گئیں،انہوں نے کہا کہ گرین اینڈ گرے پراجیکٹ کے تحت جنوبی پنجاب کے ضلع مظفر گڑھ نے سب سے زیادہ پودے لگا کر پنجاب بھر میں پہلی پوزیشن حاصل کی ہے، ایڈیشنل سیکرٹری عطاء الحق نے واضح کیا کہ لگائے گئے پودوں کی شادابی جانچنے کے لئے گرینو میٹر کا پیمانہ وضع کیا جائے اور ہر پودا سکول کے کسی نہ کسی طالب علم کے نام معنون کیا جائے تاکہ اس طالب علم میں احساس ذمہ داری اور اعتماد پیدا ہو اور وہ اپنے نام کے پودے کی لگن اور اپنائیت کے ساتھ دیکھ بھال کر سکے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں