11

گندم کے کاشتکاروں کو منظور شدہ اقسام کے بیج و دیگر زرعی مداخل کی فراہمی یقینی بنائی جائے،حسین جہانیاں گردیزی

ملتان(سٹاف رپورٹر)وزیر زراعت پنجاب سید حسین جہانیاں گردیزی کی زیر صدارت گندم کی آئندہ فصل کی پیداواری حکمت عملی کا جائزہ لینے کے لئے خصوصی کمیٹی کے دوسرے اجلاس کا انعقاد کیا گیا،گندم کے پیداواری اہداف کے حصول کے لئے کاشتکاروں کو منظور شدہ اقسام کے بیج و دیگر زرعی مداخل کی فراہمی یقینی بنائی جائے،صوبائی وزیر زراعت پنجاب سید حسین جہانیاں گردیزی،تفصیلات کے مطابق گندم کی بوائی کے موقع پر کاشتکاروں کو منظور شدہ اقسام کے بیج و دیگر زرعی مداخل کی فراہمی اور جدید پیداواری ٹیکنالوجی بارے فراہمی یقینی بنائی جائے، ان خیالات کا اظہار صوبائی وزیر زراعت پنجاب سید حسین جہانیاں گردیزی نے گندم کے پیداواری حکمت عملی کا جائزہ لینے کے لئے قائم خصوصی کمیٹی کی صدارت کے موقع پر کیا،اس موقع پر صوبائی وزیر زراعت پنجاب کو ڈائریکٹر جنرل زراعت (توسیع) ڈاکٹر انجم علی نے یوریا اور ڈی اے پی کے ہونے والے متوقع استعمال اور موجودہ سٹاک کے متعلق بھی بریفنگ دی،اس موقع پر وزیر زراعت پنجاب نے کہا کہ گندم کی بوائی کے موقع پر وہ خود کاشتکاروں کو معیاری زرعی مداخل کی فراہمی یقینی بنانے کے لئے مانیٹرنگ کریں گے اور اس کے علاوہ ڈویژنل و ضلعی سطح پر میگا فارمر گیدرنگ میں بھی شرکت کریں گے،تاکہ کاشتکاروں کو زیادہ سے زیادہ رقبہ پر گندم کاشت کرنے کی ترغیب دی جا سکے،صوبائی وزیر زراعت نے مزید کہا کہ گندم کی ممنوعہ اقسام کو کاشت نہ کرنے سے متعلق کاشتکاروں کو آگاہی فراہم کی جائے،تاکہ کاشتکار صرف منظور شدہ اقسام کا بیج استعمال کریں،جس سے فی ایکڑ پیداوار میں اضافہ ہو سکے اور گندم کی فصل کنگی جیسی بیماریوں سے بھی محفوظ رہے،اس کے علاوہ صوبائی وزیر زراعت نے کاشتکاروں کی آگاہی کے لئے پرنٹ اور الیکٹرانک /ڈیجیٹل میڈیا کے موثر استعمال بارے بھی ہدایات کیں۔ اجلاس میں کمیٹی ممبران ڈائریکٹر جنرل زراعت (توسیع) ڈاکٹر انجم علی، ڈائریکٹر جنرل زراعت پیسٹ وارننگ پنجاب ڈاکٹر محمد اسلم، منیجنگ ڈائریکٹر پنجاب سیڈ کارپوریشن فضل الرحمان، ڈائریکٹر زرعی اطلاعات پنجاب محمد رفیق اختر، ڈائریکٹر کراپ رپورٹنگ عبدالقیوم سمیت دیگر صوبائی و وفاقی محکموں کے اعلیٰ افسران نے شرکت کی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں