5

68 روپے والی چینی خریدنے کیلئے خواتین بچوں کے ساتھ گرمی میں خوار

خانیوال،یوٹیلٹی سٹورز پر فراہم کی جانے والی چینی غریب عوام کی پہنچ سے دور سستی چینی لینے والی خواتین کمسن بچوں کے ساتھ دھوپ میں کھڑے ہو کر گھنٹوں انتظار کرنے پر مجبور،تفصیل کے مطابق رمضان شریف کا مہینہ کے بعد عید بھی گزر گئی اور بکرا عید کی آمد آمد کا سلسلہ جاری ہے مگر خانیوال کے یوٹیلٹی سٹور پر فراہم کی جانے والی سستی چینی عوام کی پہنچ سے تاحال دور ہے،عوام سستی چینی کو ترس گئے ہیں یوٹیلٹی سٹور آنے والی عوام کے لئے سستی چینی درحقیقت کریانہ کی دکانوں کی زینت بن رہی ہے،اوپن مارکیٹ میں چینی اس وقت ایک سو دس روپے فی کلو ہے جبکہ یوٹیلٹی سٹور پر چینی کی قیمت 68 روپے مقرر ہے۔مگر شدید گرمی اور دھوپ میں گھنٹوں انتظار میں کھڑی رہنے والی خواتین کو بھی واپس بھیج دیا جاتا ہے،پیپلز کالونی کے قریب یوٹیلٹی سٹور کے باہر نہ صرف خواتین کی شدید گرمی میں لمبی قطاریں دیکھی گئیں بلکہ بعض خواتین کی گرمی اور حبس میں طبیعت بھی ناساز ہو گئی۔یوٹیلٹی سٹورز کے باہرکھلے آسمان تلے گرمی میں کھڑی خواتین کے لئے کوئی بھی سایہ اور پانی کا انتظام نہیں۔ شہری حلقوں نے ارباب اختیار سے اس صورتحال کا فوری طور پر نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں