7

8 سال سے الوداعی گرانٹ نہ ملنے پر ریلوے پنشنرز سراپا احتجاج

بہاول پور(نمائندہ پی این این اردو)ر یلوے کے بزرگ اور بیوائوں پینشنرز کو الوداعی گرانٹ کی ادایگی فوری طور پر کی جائے اگر اسی گرانٹ میں سے صرف 10،10 پینشنرز کو بھی الوداعی گرانٹ دی جاتی رہتی تو آج تک سب پینشنرز کو گرانٹ مل چکی ہوتی،ان خیالات کااظہار آل پاکستان پینشنرز ویلفیر ایسوسی ایشن کے ایگزیکٹو کونسل کے ممبر جاوید اقبال بلوچ نے اپنے ایک بیان میں کیا،انہوں نے کہا ہے کہ یہ انتہائی دردناک بات ہے کہ 2013سے لے کر 2021 تک کے ریٹارڈ ملازمین کو farewell گرانٹ ابھی تک نہیں ملی جو کہ عمر رسیدہ اور بیوائوں پینشنرز کے ساتھ سراسر زیادتی و انصافی ہے ۔ ہماری نوید مبشر ریلوے ڈی ایس ملتان سے گزارش ہے کہ ریلوے کے بزرگ اور بیوائوں پینشنرز کو farewell گرانٹ کی ادایگی فوری طور پر کی جائے۔ انتہائی افسوس کی بات ہے کہ ہر تین ماہ بعد ڈی ایس ملتان کو بہبود فنڈ کی مد میں گرانٹ بیواوں پنشنرز کے لیے ملتی ہے اگر اسی گرانٹ میں سے صرف 10 ،10 پینشنرز کو بھی farewell گرانٹ دی جاتی رہتی تو آج تک سب پینشنرز کو گرانٹ مل چکی ہوتی ۔مگر ڈی ایس ملتان کی اس طرف کو ئی توجہ ہی نہیں اگر ڈی ایس لاکھوں روپے کے کیش ایوارڈ منظور نظر ملازمین کو دے سکتا ہے تو کیا ایک ماہ کی farewell گرانٹ بوڑھے اور بیواہ پینشنرز کو نہیں دے سکتا اور بزرگ پینشنرز کئی سال سے دفتر کے چکر لگارہے اور دھکے کھا کھا کر ذلیل ہو رہے ہیں ۔ اس موقع پر صدر قائم عباس شاہ اور مرکزی سیکریٹری نذیرجاوید نے بھی اظہار کیا ہے اور چیرمین ریلوے کو بھی ایک لیٹر لکھا ہے کہ بزرگ پینشنرز کی داد رسی کی جائے اسی سلسلے میں جب پاکستان ریلوے کی ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ صائمہ بشیر سے ملاقات کر کے ریلوے پینشنرز کے اس مسلے بارے آگاہ کیاتوانہوں نے کہا کہ کہ ہمارے پاس فنڈ زنہیں ہیں جیسے ہی فنڈزریلیزہونگے آپ تمام کوادائیگی کردی جائیگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں